پیسوں پر میاں بیوی کے جھگڑے کا حل کیا ہے؟

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

خود ساختہ کروڑ پتی خاتون ویوین ٹو نے انکشاف کیا کہ وہ اپنے ساتھی سے پیسوں پر کبھی جھگڑا نہیں کرتیں۔ ویوین

ٹو نے کہا کہ اس کا اپنے شوہر سے چھ سال تک کبھی اس معاملے پر جھگڑا نہیں ہوا حالانکہ وہ سال میں ایک بار بحث کرتے تھے۔

"CNBC Make It" کے لیے اپنے بیان میں ویون ٹو نے کہا شاید ہمارے پاس ہر سال ایک سنجیدہ بحث ہوتی ہے اور یہ پیسے کے بارے میں نہیں ہے۔ خاتون نے وضاحت کی کہ کچھ حکمت عملیاں ہیں جو ان کے درمیان مسائل سے بچنے میں مدد کرتی ہیں۔ انہوں نے وقت سے پہلے مالی معاملات پر تبادلہ خیال کیا۔

انہوں نے بتایا کہ اپنے تعلقات کے ایک مہینے کے بعد ہم نے ہر چیز کے بارے میں واضح طور پر بات کی۔ ہم نے ایک دوسرے کی تنخواہوں کے بارے میں بھی دریافت کرلیا تھا۔

اس سے ہمیں اس بات کا تعین کرنے میں مدد ملی کہ آیا ہمارے پاس پیسے کے معاملے میں قدریں مشترک ہیں یا نہیں۔ ہم نے یہ بھی جانچ لیا کہ ہماری مالی ترجیحات مطابقت رکھتی ہیں یا نہیں۔

اس نقطہ نظر کے ساتھ ٹو اور اس کے ساتھی کے پاس اپنے الگ الگ بینک اکاؤنٹس کے ساتھ ساتھ ایک مشترکہ اکاؤنٹ ہے جس میں وہ رقم جمع کرتے ہیں۔ وہ کہتی ہیں کہ وہ مشترکہ اکاؤنٹ کا استعمال اپنے مشترکہ اخراجات کے لیے کرتے ہیں۔ ان اخراجات میں یوٹیلیٹی بلز، رہن کی ادائیگی اور روزمرہ کی چیزوں کے اخراجات شامل ہیں۔

یہ جانتے ہوئے کہ رقم ان کی گھریلو ضروریات کو پورا کرنے کے لیے مختص ہے تو کوئی بھی شخص اس بات کی نگرانی کرنے کی ضرورت محسوس نہیں کرتا کہ دوسرا باقی پیسے کیسے خرچ کرتا ہے۔

خاتون نے کہا میرا ایک ذاتی اکاؤنٹ ہے جسے میں اپنی چیزوں کے لیے استعمال کرتی ہوں۔ میں اپنی سہیلیوں کے ساتھ ڈنر پر جاتی ہوں۔ اپنے ذاتی اکاؤنٹ سے ہی مجھے گولف کی فیس ادا کرنی ہوتی ہے۔ اس طریقہ کے باعث ہم دونوں کو ایک دوسرے سے کوئی مسئلہ نہیں ہوتا۔

خاتون نے کہا میں اور میرا ساتھی اخراجات کو مساوی طور پر تقسیم کرنے کے مقابلے میں اس مشترکہ اکاؤنٹ میں رقم رکھنے کے طریقے کو ترجیح دیتے ہیں۔ کیونکہ جب آپ ہر چیز پر نصف نصف حاصل کرتے ہیں تو اس سے ایک غیر صحت بخش ذہنیت پیدا ہوتی ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ تاہم اس کا یہ مطلب نہیں کہ آپ کو اخراجات کو بالکل بھی تقسیم نہیں کرنا چاہیے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں