انڈونیشیا میں شادی والے دن دولہا کے فرار پر دلہن کا ہونے والے سسر سے نکاح

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

انڈونیشیا میں ایک شادی کی تقریب اس وقت عجیب صورتحال اختیار کر گئی جب عین موقع پر دولہا نہ آ سکا اور خاصے انتظار کے بعد دلہن کے ہونے والے سُسر نے خود کو پیش کر دیا جس کے بعد دلہن نے رضامندی سے نکاح کر لیا۔

شادی کسی بھی مرد وزن کی زندگی کا ایک خوبصورت ترین دن ہوتا ہے لیکن 29 اگست 2023 کو انڈونیشیا کے ایک گاؤں جیکوتامو میں یہی دن افسوس کے لمحات میں تبدیل ہو گیا۔

مقامی ذرائع ابلاغ کے مطابق ’ایس اے‘ نامی ایک جوان لڑکی دلہن بنی بیٹھی تھی۔ وہ اپنے ہونے والے شوہر سے کئی ماہ سے گفتگو بھی کرتی رہی تھی۔

بظاہر سب کچھ ٹھیک تھا لیکن دولہا اپنی شادی کے عین وقت پر غائب ہوگیا اور قریبی دوستوں کو صرف اتنا بتایا کہ شادی منسوخ ہو چکی ہے۔

دوسری جانب غریب لڑکی نے بہت مشکل سے جہیز وغیرہ کا سامان تیار کیا تھا اور تقریب پر زندگی کی جمع پونجی لگ چکی تھی، مہمان بھی پہنچ گئے تھے۔ اس موقع پر دلہن کے ہونے والے سسر نے لڑکی کے اہل خانہ کو اپنی شادی کی پیشکش کی جو قبول کر لی گئی۔ اس طرح ہونے والے شوہر کے سُسر نے ایس اے نامی خاتون سے نکاح کر لیا۔

لڑکی کے بھائی، وستو احمد نے اخباری نمائندوں کو بتایا کہ فرار ہونے والے لڑکے کے والد سے ان کی بہن نے شادی کر لی ہے۔ لڑکے کے والد نے بتایا کہ اس تقریب پر لاکھوں روپے خرچ ہو چکے تھے اور فضا میں بے یقینی تھی اور اسی وجہ سے انہوں نے آگے بڑھ کر شادی کا فیصلہ کیا۔

سوشل میڈیا پر لوگوں نے اس خبر پر ملے جلے رد عمل کا اظہار کیا ہے۔ ان کے مطابق یہ رقم بچانے کا ایک حربہ ہے۔ جبکہ بعض افراد نے دلہن کے لیے ہمدردی ظاہر کی ہے جسے اتنا بڑا سمجھوتہ کرنا پڑا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں