معمر ترین قرار دیا گیا 21 سالہ مرغا ٹی وی دیکھنے کا شوقین نکلا

گینز ورلڈ ریکارڈ بک میں نام درج کرانے والا ’’پینٹ‘‘ ناشتے میں بلو بیری اور دہی تناول کرتا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

عیش و عشرت سے بھرپور زندگی میں دنیا کی سب سے معمر ترین مرغے کی عمر 20 سال اور 272 دن تھی جب گنیز بک آف ورلڈ ریکارڈ نے اس کا نام درج کیا تھا۔ یہ مرغا ناشتے میں کچھ خاص طور پر بلو بیری کے ساتھ دہی بھی تناول کرتا ہے۔ مرغے کے متعلق مزید پتہ چلا ہے کہ یہ ٹی وی دیکھنے کا شوقین بھی ہے۔

چند روز قبل اپنی 21ویں سالگرہ منانے والے مرغے کی مالکہ مارسی پارکر ڈارون نے واشنگٹن پوسٹ کو بتایاکہ ایک مرغے کی اوسط عمر 5 سے 8 سال تک ہوتی ہے۔ اس لیے میرے مرغے ’’ پینٹ ‘‘ کی عمر حیران کن ہے اور یہ بڑی کامیابی ہے۔ ڈارون نے بتایا کہ اس کا مرغا منفرد شخصیت کا حامل ہے۔ یہ صحت مند ہے اور عیش و آرام سے زندگی گزارتا ہے۔

مالکہ نے ہنستے ہوئے بتایا کہ اگر پینٹ کو اپنا پسندیدہ ناشتہ، بلیو بیری اور دہی نہیں ملتا تو وہ اس وقت تک چیخنا بند نہیں کرتا جب تک میں اس کے لیے اس کا یہی ناشتہ نہ لے آؤں۔

ڈارون نے اس مرغے کے ساتھ شروع سے اپنی کہانی بیان کی اور بتایا مجھے فارم میں ایک انڈہ پڑا ہوا ملا۔ پہلے میں نے سوچا کہ یہ سڑا ہوا خراب انڈہ ہے۔ میں نے اسے اٹھایا اور اسے کچھوؤں کے پاس پھینکنے ہی والی تھی کہ وہ اسے کھا لیں کہ میں نے خول کے اندر سے آواز سنی۔ آواز سن کر میں نے اس انڈے کوتوڑا تو یہ مرغا نکل آیا۔ وہ میرے گیلے اور لرزتے ہوئے ہاتھ پر بیٹھ گیا۔

میں نے اسے دوسرے مرغی کے چوزوں کے ساتھ چھوڑ دیا لیکن دوسرے چوزوں کی ماں نے اسے اپنے قریب نہ پھٹکنے دیا۔ اس لیے میں نے اس کا خیال خود رکھنے کا فیصلہ کیا۔ میں سے اپنے گھر لے آئی اور اسے گرم چراغ کے نیچے رکھا۔ اسے کھانا پینا سکھایا۔ یہ بہت چھوٹا تھا، اس لیے میں نے اسے پینٹ (مونگ پھلی) کہنا شروع کردیا۔

یہ پینٹ آج 21 سال بعد بھی زندہ ہے۔ ہم کچھ بلیوں اور کتوں کے ساتھ ایک ہی کمرے میں شریک ہوتے ہیں۔ مجھے یاد ہے جب میں نے اسے کھیلنے اور بھاگنے کے لیے باہر صحن میں لے جانے کی کوشش کی تو دوسری مرغیوں نے اس کے ساتھ رہنے سے انکار کر دیا تھا۔ اس کے بعدپینٹ نے گھر میں رہنے اور ٹی وی دیکھنے کو ترجیح دینا شروع کردی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں