سعودی خاتون نے نمازیوں کی آسانی کیلئے گھر کا ایک حصہ گزرگاہ بنا دیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

سعودی عرب کی خاتون العاتی بنت سلامہ الخمسان نے خیراتی کاموں کے حوالے سے اس وقت ایک اعلی مثال قائم کردی جب انہوں نے اپنے گھر کے ایک حصے کو نمازیوں کے لیے گزرگاہ بنادیا اور اس طرح حائل کے شمالی محلے منتزہ کے لوگوں کیلئے مسجد جانے میں آسانی پیدا کردی۔

محلے کے ایک بزرگ نے بتایا کہ یہ راہداری حائل میں مسجد کی طرف جاتی ہے۔ اس نے راہداری کی تعمیر کی کہانی بھی سنائی اور کہا کہ لوگوں میں سے ایک نے العاتی سے کہا کہ میری بھانجی ہمیں مسجد کے لیے راستہ چاہیے تو العاتی نے جواب دیتے ہوئے کہا لوگوں کو خوشخبری سنادو ۔

العاتی کے ایک رشتہ دار نے کہا کہ اس کی خالہ نے یہ راہداری محلے کے لوگوں کی خاطر کھولی ہے۔ یہ ان کے اور مسلمانوں کے لیے اچھا ہے۔ ہر کوئی مسجد، گروسری اور بیکریوں میں جانے کے لیے راہداری کا استعمال کرتا ہے۔ رشتہ دار نےبتایا کہ جب العاتی نے گھر بیچا تو اس نے یہ شرط رکھی کہ خریدار اس راہداری کو بند نہیں کرے گا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں