دبئی میں لذت کام ودہن کے آٹھ اہم مراکز کے بارے میں جانیے!

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
10 منٹس read

دبئی کے چنیدہ ریستوراں اپنے تیسرے، چوتھے اور پانچویں مراحل کی سرگرمیوں کے لیے مکمل طور پر تیار ہیں۔

رواں سیزن میں ایمریٹ کے کچھ مشہور خانساماں اور آپریٹرز جرأت مند ہو رہے ہیں جب کہ دوسرے لوگ ایسے ریستورانوں کی نئی شاخیں کھول رہے ہیں جو لندن میں بہت کامیاب رہے ہیں - ایک ایسا تصور جو تارکینِ وطن کے اس مرکز میں بخوبی کام کرتا ہے۔

توسیع کے خد وخال اس حقیقت کی عکاسی کرتے ہیں کہ یہ شہر گذشتہ کچھ سالوں سے تزئینِ طعام کا مرکز رہا ہے۔ مقامی سیاحتی ایجنسیوں نے کھانے پینے کے میلوں، ٹیلی ویژن شوز اور فہرستوں اور ایوارڈز کو سپانسر کر کے ریستوراں اور باورچیوں کی تشہیر کی ہے۔

2022 میں پہلی بار مشیلن انسپکٹرز شہر میں آئے جیسے دنیا کی 50 بہترین ریستوراں تنظیموں کے علاقائی مشرقِ وسطیٰ/شمالی افریقہ کے ایوارڈز آئے۔

سرِ فہرست 10 میں سے پہلے چھ مقامات کے ساتھ دبئی اس سال کی فہرست میں غالب رہا۔

مشہور ترین ریستوران غیر ملکی باورچیوں کی طرف سے فرنچائز کی توسیع ہوا کرتے تھے لیکن اب بہت سے اعلیٰ آپریٹرز امارات میں رہتے اور کام کرتے ہیں اور ممتاز تصورات تخلیق کر رہے ہیں۔

ایک بہت بڑا افتتاح گلڈ ریستوران کا ہوا ہے جو شہر کے کاروباری ضلع میں طعام کے کئی ممتازمقامات کے ساتھ ایک وسیع جگہ پر قائم ہے۔

دبئی کی مسابقتی مارکیٹ میں ہوٹلوں کے لیے ریستوران بھی تیزی سے اہمیت اختیار کر گئے ہیں۔ بلاک بسٹر اٹلانٹس دی رائل ہوٹل جو سال کے آغاز میں گلوکارہ بیونسے کی ایک نادر نجی پرفارمنس کے ساتھ کھلا تھا، پہلے ہی مشہور شخصیات اور میکلین ستارے کے حامل باورچیوں کے ریستورانوں کا ایک سلسلہ کھول چکا ہے۔ اگلے سال جورن فرینٹزین دو مقامات کھول رہے ہیں۔

اس سال کے آخر میں اٹلانٹس ہی کے ڈویلپر - Kerzner International - دبئی میں لنک نامی مقام پر کھلنے والے دو نئے ہوٹلوں کے ساتھ اور بھی اعلیٰ باورچیوں کو لا رہے ہیں۔

یہ اس سیزن میں دبئی کے آٹھ دلچسپ ترین مقامات میں سے ایک ہے۔ ذیل میں ان کے بارے میں پڑھیں۔

دی گلڈ

دبئی کے دیرینہ ریستوران مالک ٹام آرنل - ٹام اینڈ سرگ اور حال ہی میں ہاکربوئی جیسے پسندیدہ لوگوں کے پیچھے جن کا ہاتھ ہے، وہ گلڈ ریستوران لائے ہیں جہاں یورپی کھانوں پر توجہ مرکوز ہو گی۔ پانچ سال میں بننے والے 20,000 مربع فٹ جگہ پر محیط بروک فیلڈ پلیس کے دامن میں واقع یہ طعام گاہ دبئی کے کاروباری ضلع میں بینکرز کے لیے نئی منزل ہے۔

یہاں داخل ہونا جنگل میں چلنے کی طرح محسوس ہوتا ہے — بس جانور اور نمی نہیں ہے۔ دیواروں سے اصل اور نقلی نباتات لٹکے ہوئے ہیں: کینٹیا کھجور کے درخت، فیکس، زیڈ پلانٹس اور سانپ کے پودے۔ گلڈ ان مراحل میں کھل رہا ہے جسے آرنل عموماً دبئی کے ڈرامائی انداز میں کہتے ہیں، "ایکٹ ون"، ایکٹ ٹو" اور "ایکٹ تھری"۔

ایکٹ ون میں ایک پیٹسیری اور براسیری شامل ہے جسے نرسری کہا جاتا ہے جس میں گھریلو مٹھائیاں اور پیسٹری شامل ہیں اور ظہرانہ سروس ہے جس میں کنفٹ بطخ کی ٹانگیں اور لابسٹر لنگوینی جیسے پکوان شامل ہیں۔

دریں اثناء پوٹنگ شیڈ ایک الگ تھوڑا سا ڈوبا ہوا علاقہ ہے جس کے لیے آرنل کہتے ہیں کہ انہوں نے لندن کے چلٹرن فائر ہاؤس سے متأثر ہو کر کھولا ہے۔

اس ہفتے کھلنے والے ایکٹ ٹو میں سمندری غذا کے لیے راک پول جیسے سیخ پر پکے ہوئے ہوکائیڈو سکیلپس شامل ہیں؛ یہ رسمی کھانے کا سیلون ہے جس میں بلیک ٹرفل ریسوٹو، واگیو اور پرائم سٹیک اور لہسن کے گھونگے شامل ہوں گے؛ اور نجی پارٹیوں کے لیے رٹز روم ہے۔

ایکٹ تھری ایویاری ہو گا، ایک ایسا کاک ٹیل بار جو دیر تک کھلا رہے گا۔

دی لنک

شمالی دبئی میں بالکل نئی فلک بوس عمارتوں کو جوڑنے والے کینٹیلیور میں ڈھکے ہوئے ریستوران دی لنک مقامی باشندوں کے ساتھ ساتھ مہمانوں کو دو نئے ہوٹلوں میں کھانا کھلانے کا ارادہ رکھتا ہے: لگژری ون اینڈ اونلی ون زابیل اور فٹنس تھیم پر مبنی سیرو، دونوں کیرزنر۔ فن لینڈ کے ترک شیف مہمت گورس کا ایک بلند فوڈ ہال آرازونا لیونٹ اور جزیرہ نما عرب کے کھانے پیش کرے گا۔

لا ڈیم ڈی پِک کے نام سے مشہور خانساماں این سوفی پک کی مہربانی سے فرانسیسی کھانا آئے گا۔ خانساماں دبیز مونوز اپنے دستخطی موہاک طرز میں تراشیدہ بال اور اپنے سٹریٹ زو تصور کو دبئی لے کر آرہے ہیں۔

بو سونگ ویساوا اور ڈیلن جونز خانساماں دوانگ دے نامی ایک تھائی ریسٹورنٹ کھولیں گے؛ خانساماں پیکو مورالیس کا کابو اندلس کے کھانے پیش کرے گا۔ اور اس مقام کا جاپانی ریستوراں خانساماں ٹیٹسویا وکوڈا کی طرف سے سیگیٹسو ہوگا۔ یہ تمام دسمبر میں کھل رہے ہیں۔

رو آن 45

مشہور شخصیت خانساماں جیسن ایتھرٹن اس سال گروسوینر ہاؤس ہوٹل میں ریستورانوں اور بارز کا مجموعہ کھول رہے ہیں۔ چار مقامات میں سے آخری پوش رو آن 45 ہے جو تین "ایکٹس" میں 17 مراحل پر مشتمل فہرستِ طعام پیش کرے گا۔ (دوبارہ بہت زیادہ دبئی۔)

ایکٹ ون ایک شیمپین لاؤنج میں ہوتا ہے جو ایک نوابی رہائش گاہ میں پیسے والے قدیم پارلر کی طرح محسوس کرنے کے لیے ہے۔

ایکٹ ٹو کھانا ہے۔ تیسرا ایکٹ "گرینڈ فائنل" "خانساماں کی لائبریری" میں میٹھے کھانے اور مشروبات بشمول پریمیم کوگنیکس اور نایاب وہسکی پر مشتمل ہے۔ ریستوراں میں فی رات 22 مہمانوں کے لیے جگہ ہے۔ کھانے کی فی کس قیمت 1,145 درہم ($312) ہے جس میں مشروبات شامل نہیں ہیں۔ افتتاح 21 ستمبر کی رات کو ہے۔

جامہ وار

خوش طعامی کا یہ ہندوستانی کا تصور جو اپنی لندن کی طعام گاہ میں میکلین اسٹار کا حامل ہے، دسمبر کے لیے ڈاون ٹاؤن دبئی میں ایک شاخ کا منصوبہ بنا رہا ہے جس میں ایگزیکٹو شیف سریندر موہنین فہرستِ طعام کی نگرانی کر رہے ہیں۔

اس ریسٹورنٹ گروپ نے 2001 میں بنگلور میں اپنا پہلی طعام گاہ کھولی؛ اس کے بعد یہ دوحہ تک پھیل گیا ہے اور اس کی شاخیں ہندوستان میں بھی ہیں۔ دبئی مینو کی تاحال تصدیق نہیں ہوئی ہے۔ امید کی جا رہی ہے کہ اس میں لندن کے مینو کے مقبول پکوان شامل ہوں گے جیسے پرانا دہلی بٹر چکن اور کالی مرچ اور لہسن میں پکے ہوئے ٹیلچیری نرم خول کے کیکڑے۔

ہو لی کو

دبئی میں 13,000 سے زیادہ ریستوراں ہیں لیکن ان میں کورین ریستوراں زیادہ نہیں ہیں۔ اب یہاں دو کھلنے والے ہیں۔

ان میں سے ایک دبئی کے مشہور خانساماں ریف عثمان کا ہو لی کو ہے جنہوں نے شہر میں ریف جاپانی کوشیاکی سمیت ایشیائی ریستورانوں کی ایک چھوٹی سی سلطنت بنا دی ہے۔ اس کی تازہ ترین پیشکشوں میں ریف لنچ باکس (کمچی فرائیڈ رائس، بلگوگل اور ناپا کمچی) کے ساتھ ساتھ سیخ پر پکے ہوئے واگیو گالبی اور جیجو جزیرے کے سکیلپس شامل ہیں۔ ریستوران نے جولائی میں ایک نرم افتتاح کیا تھا؛ یہ 27 ستمبر کو باضابطہ طور پر شروع ہوگا۔

گیمی

دبئی کا دوسرا قابلِ ذکر کوریائی ریستوران گیمی ہے، ایک ایسی جگہ جہاں ہاکر اسٹال کا ماحول ہے اور چینی، انڈونیشیائی اور دیگر جنوب مشرقی ایشیائی اثرات ہیں۔ پکوانوں میں کوریائی چاول، ٹیوک بوکی (مصالحہ دار چاول کیک) اور اسکیلین اور بیف رینڈانگ کے ساتھ بنی بی بیمپ شامل ہیں۔

ریستوران میں الکوحل پیش نہیں کی جاتی لیکن یہ غیر الکوحل والی کاک ٹیل پیش کرتا ہے اور اسے 12 ستمبر کو کھولا گیا ہے۔ ساحل کے قریب دبئی کے پرانے محلوں میں سے ایک - جمیرہ کا مقام - 11 ووڈ فائر سے سڑک کے نیچے ہے جو گیمی کے عقب میں ایٹیلیئر ہاؤس ہاسپیٹلیٹی گروپ کا ایک اور ریستوراں ہے۔

سگنور ساسی

لندن سے یہاں لایا گیا اور دبئی کی دلچسپ ترین طعام گاہوں میں سے ایک پر آباد اطالوی ریسٹورنٹ سگنور ساسی - پام جمیرہ پر سینٹ ریگس ہوٹل کی نئی تعمیر شدہ چھت پر واقع ہے۔

جیسا کہ اسے سینٹ ریگیس گارڈنز کہا جاتا ہے، یہ دو میکلین ستاروں کے حامل ٹریسنڈ اسٹوڈیو اور چیز وام کا مسکن بھی ہے۔ دو دیگر ریستوران اسٹیک ہاؤس لینا اور جاز ایج کی طرز کا حامل اریتھا بھی اس مقام پر کھلیں گے۔ 25 ستمبر کو کھلنے والے نئے سگنور ساسی کے پکوان میں لابسٹر آلا کاتالانا، پیزا اور دم دیئے ہوئے بیف کی چھوٹی پسلیاں شامل ہیں۔

Maison de la Plage [بیچ ہاؤس]

ساحل سمندر کے کچھ کلب بکنی سینڈوچ کے مقابلے میں آرام کرنے کے مناظر کے لیے زیادہ مشہور ہیں۔ لیکن دبئی کے مشہور ترین شیفز میں سے ایک میسن ڈی لا پلیج بلاشبہ کھانے پر توجہ مرکوز کریں گے۔

فرانسیسی بحیرۂ روم کی فہرستِ طعام میں ٹرفل کے ساتھ رگاٹونی، "ایزو برگر" اور ایک نیکوائس سلاد جیسے پکوان شامل ہوں گے۔ ریستوراں کو فنڈامینٹل ہاسپیٹلیٹی گروپ کی حمایت حاصل ہے۔ یہ گروپ دبئی کے پسندیدہ جیسے کہ یونانی ریستوراں گایا اور شنگھائی می کے پیچھے ہے۔

اگر آپ نے تاحال ان طعام گاہوں کے بارے میں نہیں سنا تو غالباً آپ جلد ہی سنیں گے: گروپ اگلے پانچ سالوں میں عالمی سطح پر 100 ریستوران کھولنے کا ارادہ رکھتا ہے جن میں اگلے سال کے وسط تک لندن میں گایا، ماربیلا اور میامی کا قیام شامل ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں