مراکش یا لیبیا، نومولود بچی کی لٹکتی نال کے ساتھ ویڈیو کی حقیقت کیا ہے؟

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

مراکش میں زلزلے اور لیبیا میں سمندری طوفان سے مچنے والی تباہی میں دردناک مناظر دیکھنے میں آرہے ہیں۔ ایک دردناک منظر کے ویڈیو کلپ نے لوگوں کو دل گرفتہ کردیا۔

چھوٹی بچی، چھوٹی بچی کی آوازوں کے ساتھ اس ویڈیو کلپ میں دیکھا جا سکتا ہے کہ ایک بچی پیدائش کے بعد گندگی میں پڑی پائی گئی۔ یہ بچی پیدا ہوئی اور اس کے ساتھ ہی اس کی نال بھی لٹک رہی ہے۔

افواہوں کے سمندر کے درمیان اس ویڈیو کا ایک منظر پچھلے کچھ دنوں سے بڑے پیمانے پر پھیل چکا ہے۔

اس سے متعلق دعوی کیا گیا کہ وہ مراکش کے ایک گاؤں میں ایک گھر کے ملبے کے نیچے زندہ بچ جانے والی نومولود بچی ہے۔ گزشتہ ہفتے کی صبح مراکش میں زلزلہ سے بڑی تباہی مچ گئی تھی۔

دوسری طرف کچھ لیبی شہریوں نے بھی ایسے ہی ایک ویڈیو کلپ شائع کیا ہے جس میں ایک چھوٹی بچی زندہ پائی گئی ہے۔ یہ ویڈیو مشرقی لیبیا میں سیلاب آنے والے طوفانوں کے کچھ دن بعد سامنے آئی۔

سوشل میڈیا پر اس کلپ کو شیئر کرنے والے کچھ اکاؤنٹس نے دعویٰ کیا کہ ماں نے سیلاب کے دوران اپنے نوزائیدہ بچی کو جنم دیا۔ آفت کی ہولناکیوں میں بچی کی زندہ بچ جانے کو معجزہ نما واقعہ شمار کیا جارہا ہے۔

تمام دعوے غلط

’’العربیہ ڈاٹ نیٹ‘‘ نے اس حوالے سے تحقیق کی اور بتایا ہے کہ یہ ویڈیو جعلی ہے۔ العربیہ ڈاٹ نیٹ نے بتایا کہ معلوم ہوا کہ یہ اس لمحے کی ہے جب 2019 میں الجیریا میں نوزائیدہ بچی ملی تھی۔ یاد رہے کہ افواہیں اکثر سوشل نیٹ ورکنگ ویب سائٹس پر پھیلائی جاتی ہیں۔ خاص طور پر آفات، جنگوں اور دیگر غیر معمولی حالات کے دوران افواہوں کی گردش بڑھ جاتی ہے۔

یاد رے مراکش میں آنے والے زلزلے میں تقریباً 3000 جانیں گئی ہیں اور لیبیا میں سیلاب سے تقریباً 11 ہزار افراد ڈوب کر موت سے ہمکنار ہو چکے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں