ریاض انٹرنیشنل بک فیئر 2023 میں سلطنت عمان بطور مہمان خصوصی مدعو

کتاب میلہ 28 ستمبر سے 7 اکتوبر تک "انسپائرنگ ڈیسٹینیشن" کے نعرے کے تحت منعقد ہو رہا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

سعودی عرب میں ریاض انٹرنیشنل بک فیئر 28 ستمبر سے 7 اکتوبر تک منعقد کیا جارہا ہے۔ اس کتاب میلے میں اس مرتبہ سلطنت عمان کو مہمان خصوصی کے طور پر مدعو کیا گیا ہے۔ "ایک متاثر کن منزل" کے نعرے کے تحت یہ میلہ کنگ سعود یونیورسٹی کے کیمپس میں منعقد ہوگا۔
سلطنت عمان کو اس نمائش میں تاریخی اور مضبوط برادرانہ تعلقات کے فریم ورک کے تحت شرکت کے لیے مدعو کیا گیا ہے۔ یہ میلہ دونوں برادر ملکوں کے عوام کو جوڑتا ہے۔ یہ اقدام سعودی عرب اور سلطنت عمان کے درمیان ثقافتی تبادلے اور تعاون کی عکاسی بھی کر رہا ہے۔
نمائش کے مرکز میں ایک پویلین سلطنت عمان کے لیے مختص کیا گیا ہے جس میں کتابیں اور مخطوطات موجود ہیں۔ یہاں سلطنت عمان کی قومی ثقافت کے اجزا کی نمائندگی کے علاوہ عمانی ثقافت کی متعدد علامتوں کو پیش کیا جائے گا۔ نمائش میں دس لاکھ سے زائد زائرین کی آمد متوقع ہے۔
ریاض بین الاقوامی کتاب میلہ 1,800 سے زیادہ اشاعتی اداروں کی شرکت کے ساتھ قارئین کے لیے ایک علمی سفر پیش کرے گا۔ اس کے ساتھ ایک بھرپور ثقافتی پروگرام ہے جس میں تمام عمر کے افراد کے لیے درجنوں سرگرمیاں شامل کی گئی ہیں۔ سعودی عرب کے ایک اشرافیہ گروپ کے لیے مکالمے کا سیشن رکھا گیا ہے۔ عرب اور بین الاقوامی مقررین، کلاسیکی اور عصری شاعروں کی شاعری کی شامیں منعقد کی جائیں گی۔ سعودی اور بین الاقوامی ڈرامے اور موسیقی اور گانے کی محفلیں سجیں گی۔ علم کے مختلف شعبوں میں ورکشاپس کا انعقاد کیا جائے گا۔ بچوں کے لیے مختص کردہ علاقے میں پڑھنے کے بارے میں شعور کو بڑھانے کی سرگرمیاں رکھی گئی ہیں۔
نمائش میں ثقافتی اداروں اور بین الاقوامی ہاؤسز کی بڑی تعداد شریک ہو رہی ہے۔ میلے میں کتابوں کے نایاب اور قیمتی نسخے پیش کئے جائیں گے۔ قیمتی مخطوطات اور فنکارانہ پینٹنگز کی نمائش کی گئی ہے۔
نمائش 4 اکتوبر کو ادب، اشاعت اور ترجمہ اتھارٹی کے زیر اہتمام "بین الاقوامی پبلشرز کانفرنس" کے ساتھ ہے جس میں کتابی صنعت کے مختلف پہلوؤں اور پبلشنگ ہاؤسز کو درپیش چیلنجز پر تبادلہ خیال کیا جائے گا۔

مقبول خبریں اہم خبریں