پہلی مرتبہ عرب نژاد مصنف امین معلوف ’’ فرانس اکیڈمی‘‘ کے سیکرٹری جنرل منتخب

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

فرانس میں عرب نژاد معروف مصنف ’’ امین معلوف‘‘ کو بڑے اعزاز سے نواز دیا گیا۔ انہوں نے فرانسیسی زبان میں عروف ناول لکھے جن کا دنیا بھر کی زبانوں میں ترجمہ کیا گیا ہے۔ ان کے ناولوں کے عربی ورژنز کے نام’’ صخرہ طانیوس‘‘ ، ’’ الھویات القاتلہ‘‘ ، ’’ لیون الافریقی‘‘ اور ’’ الحروب الصلیبیہ‘‘ ہیں۔
امین معلوف کو نئی کامیابی یہ ملی ہے کہ انہیں ’’ فرانس اکیڈمی‘‘ کے مستقل سکریٹری کے طور پر منتخب کرلیا گیا ہے۔ انہیں ایلین کیریری ڈانکوس جو اگست میں انتقال کر گئے تھے کے بعد اس عہدہ پر تعینات کیا گیا۔ اس حوالے سے ان کا مقابلہ جان کریسٹوف رووان سے تھا۔ اس طرح وہ 400 سالوں میں فرانس کی سب سے بڑی ثقافتی عمارت میں پہلے عرب نژاد سیکرٹری جنرل ہیں۔
واضح رہے ’’فرانس اکیڈمی‘‘ کا مستقل سیکرٹری وہ ہوتا ہے جو اس ادارے کو نہ صرف چلاتا بلکہ فرانسیسی زبان کا دفاع اور ترقی کرتا ہے۔ 1634 سے اب تک صرف 32 افراد اس عہدے پر فائز رہے ہیں۔ یہ عہدہ گزشتہ ماہ کے اوائل میں ایلین کیرئیر ڈینکوس کی موت کے بعد سے خالی تھا۔ وہ وہ 1999 سے اس عہدے پر فائز رہی تھیں۔
لبنانی نژاد فرانسیسی مصنف امین معلوف کی عمر 74 سال ہے۔ انہوں نے 1993 میں ناول ’’ Le Rocher de Tanios ‘‘ کے لیے گونکورٹ پرائز جیتا تھا۔ اس ناول کا اردو میں عنوان ’’ ٹینیس کی چٹان‘‘ بن سکتا ہے۔ یہ ناول مشرق سے متاثر تاریخی ناولوں کے چہروں میں سے ایک ہے۔ مصنف نے اپنے کاموں میں تہذیبوں کے ہم آہنگی کے مسئلے پر توجہ مرکوز کی۔
یاد رہے 2012 میں اکیڈمی میں ان کے استقبال کے موقع پر کرسٹوف رووان نے خود امین معلوف کو یہ کہہ کر مخاطب کیا تھا کہ آپ واقعی ایک پاکیزہ تدبیر کے آدمی ہیں۔ ہر موقع پر آپ ہر اس شخص کے لیے زبردست تعریف کرتے ہیں جو آپ سے مخاطب ہوتا ہے۔ معلوف نے اپنے دوست 71 سالہ جین کرسٹوف سے مقابلہ کیا۔
جین کرسٹوف رووان نے قدیم ادارے کے سربراہ کے انتخاب میں جمہوری مقابلے کے پہلوؤں سے علیحدگی پر ناراضگی کا اظہار کیا جو خود کو جدیدیت سے ہم آہنگ کرنے پر فخر کرتا ہے۔ فرانسیسی روزنامے لی موندے سے وابستہ ایم میگزین نے ہفتے کے روز ان کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ ایسا لگتا ہے جیسے ہم شمالی کوریا میں ہیں۔ چھٹیوں سے واپسی کے بعد اکیڈمی کے پہلے سیشن کے دوران انتخابی عمل بند طریقے سے ہوا۔
نئے مستقل سکریٹری کو ’’ فرانس اکیڈمی‘‘ کی ڈکشنری کے نویں ایڈیشن کو مکمل کرنا - کیونکہ یہ کام تقریباً مکمل ہو چکا ہے۔ تاہم دو اور اہم مسائل ہیں جو اسے پریشان کر دیں گے۔ ایک مسئلہ یہ ہے کہ اکیڈمی اس وقت ایک حساس مالی صورتحال سے دوچار ہے۔ اس کے علاوہ ادارے کی کشش سے متعلق ایک اور مسئلہ بھی ہے۔ اس تناظر میں طویل اعلان کردہ مشنز میں مزید نوجوان مردوں اور خواتین کو اکیڈمی میں متعارف کرانا ہے۔ یہ مشنز اس وقت 28 مرد اور سات خواتین پر مشتمل ہے۔ ایک ایسا ہدف جس کا حصول بہت مشکل ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں