’’العلا‘‘ میں آنیوالا ہر سیاح اوسط 1680 ڈالر خرچ کر رہا: سعودی عہدیدار

حقائق تصدیق ٹرینڈنگ
پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

سعودی عرب کے تاریخی اور سیاحتی مقام ’’ العلا‘‘ اپنے ملک کے لیے بڑے پیمانے پر آمدن کا ذریعہ بن گیا ہے۔ العلا کے رائل کمیشن کے ایک سینئر عہدیدار نے ’’ العربیہ‘‘ کو بتایا کہ اس تاریخی شہر العلا میں آنے والا ہر ایک سیاح روزانہ اوسط 560 ڈالر خرچ کرتا ہے۔ ہر سیاح کا اوسط قیام تین دن ہوتا ہے۔ اس طرح ایک سیاح اوسط 1680 ڈالر خرچ کرتا ہے۔

سعودی تاریخی مقام العلا میں موجود معروف قدیم عمارت
سعودی تاریخی مقام العلا میں موجود معروف قدیم عمارت

آر سی یو کے ڈیسٹینیشن مارکیٹنگ اینڈ منیجمنٹ کے نائب صدر رامی المعلم نے بتایا کہ حالیہ عرصہ میں دارالحکومت ریاض سے ہزار کلومیٹر سے زیادہ دور پہاڑوں کے درمیان واقع نخلستان کی اس وادی کا دورہ کرنے والے سیاحوں کی تعداد میں اضافہ ہوا ہے۔

ایزمتھ میوزک فیسٹیول کے موقع پر بات کرتے ہوئے رامی المعلم نے بتایا کہ یہ قصبہ مقامی، علاقائی اور بین الاقوامی سیاحوں کو اپنی طرف متوجہ کر رہا ہے۔ دنیا بھر سے گھومنے پھرنے والے خانہ بدوش افراد، نڈر سیاح، باحوصلہ افراد اور عیش و عشرت کے دلدادہ افراد ’’ العلا‘‘ کا رخ کر رہے ہیں۔

سعودی تاریخی مقام العلا میں ایزیمتھ میوزک فیسٹول کاایک منظر
سعودی تاریخی مقام العلا میں ایزیمتھ میوزک فیسٹول کاایک منظر

واضح رہے ’’ رائل کمیشن آف العلا‘‘ یعنی آر سی یو کا قیام 2017 میں عمل میں آیا۔ اس کے بعد سعودی ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان نے 2019 میں میگا ٹورسٹ پروجیکٹس کا آغاز کرایا۔ اس کے بعد یہ قصب سپاٹ لائٹ میں آگیا ہے۔

العلا سعودی عرب کا پہلا یونیسکو کے عالمی ثقافتی ورثے کی فہرست میں شامل مقام ہے۔ یہ ایک ایسی جگہ ہے جس میں ایسے مقبرے ہیں جو پہلے ہزار سال قبل مسیح کے اختتام سے لے کر پہلی صدی عیسوی تک نباتائی شہر کا حصہ تھے۔

سعودی تاریخی مقام العلا کا ایک نظارہ
سعودی تاریخی مقام العلا کا ایک نظارہ

اس شہر میں اب فلائی دبئی کے ذریعہ ایک ایئرپورٹ بھی بنایا گیا ہے۔ یہ متحدہ عرب امارات کے مالیاتی مرکز کو ہفتہ میں دو بار جوڑتا ہے۔ سعودیہ ایئر لائن کے ذریعہ گھریلو پروازیں اس مقام کو ریاض، جدہ اور دمان سے سے جوڑتی ہیں۔

یہاں پر ستارے دیکھنے کے پوائنٹس اور سرگرمیاں ہیں۔ ہائیکنگ، بائیکنگ اور زپ لائننگ کی تفریح بھی ان سیاحوں کو دستیاب ہے جو جو ایڈونچر اور فطرت پر مبنی تجربات کے خواہاں ہیں۔

سعودی تاریخی مقام العلا
سعودی تاریخی مقام العلا

المعلم نے بتایا کہ سیاحوں کی بڑھتی ہوئی سالانہ آمد کو برقرار رکھنے کے لیے بنایا گیا مقامی ہوائی اڈہ کے سائز اور رابطے میں اب توسیع کی جائے گی۔ پیرس سے پرواز کے علاوہ قاہرہ کو بھی فہرست میں شامل کیا جائے گا۔

العلا سیاحت کی معیشت کا ایک بنیادی محرک بن گیا ہے۔ سعودی عرب کے تیل کی آمدنی پر انحصار ختم کرنے کے بڑے منصوبوں کے مطابق العلا کی شناخت اور ثقافت کو محفوظ رکھنے کے لیے آر سی یو کی صلاحیتوں پر بھرپور اعتماد کا مظاہرہ کیا جا رہا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں