غزہ جنگ کی وجہ سے پاکستانی نژاد برطانوی فرسٹ منسٹر کا سسرال غزہ میں پھنس گیا

اسرائیل کا اپنے تاریخی پشتی بان ملک کے اہم ترین افراد کے غزہ سے محفوظ انخلا کی ضمانت دینے سے انکار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

سکاٹ لینڈ کے فرسٹ منسٹر حمزہ یوسف نے پیر کو جاری کردہ ایک بیان میں کہا کہ ان کی بیگم کے والدین غزہ میں پھنسے ہوئے ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ وہ حماس کے اسرائیل پر حملے
کے بعد سے وہیں پر ہیں۔

واضح رہے کہ حمزہ یوسف کی اہلیہ فلسطینی ہیں۔ اور ان کے والدین شمال مشرقی سکاٹ لینڈ میں رہائش پذیر ہیں ۔ وہ غزہ اپنے قریبی رشتے داروں کو ملنے کے لیے گئے تھے۔

حمزہ یوسف نے رپورٹرز کو بتایا کہ اب تک وہ لوگ غزہ میں ہی ہیں اور انہیں خدشہ ہے کہ وہ غزہ میں حالیہ حملے کے نتیجے میں وہاں پھنس گئے ہیں۔

حمزہ یوسف کے سسرال ان کو اسرائیل حکام کی طرف سے غزہ سے نکل جانے کا حکم ملا ہے۔نکل جاؤ مگر آپکی محفوظ واپسی کی ضمانت نہیں دیتے۔

ہر دن اور ہر رات وہاں ایسا گزر رہا ہے کہ وہ نہیں جانتے کہ کل کیا ہو گا حالانکہ ان کا حماس سے کوئی لینا دینا نہیں جیسا کہ غزہ کے اکثر لوگوں کا حماس سے کوئی لینا دینا نہیں۔ ہم سو نہیں سکتے ہم مسلسل اپنے فون پر نظریں جمائے کسی خبر کے منتظر ہیں۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ دونوں طرف کے معصوم شہریوں کو بھگتنا پڑ رہا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں