ترکیہ: نوجوان نے چاقو کے وار سے ماں کو موت کے گھاٹ اتار دیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

ترکیہ کے ایک نوجوان نے حال ہی میں ملک کے شمال مغرب میں واقع ریاست ایڈرن میں ایک ہولناک قتل کا ارتکاب کیا۔ پھر کئی گھنٹے تک چھپنے کے بعد خود کو سیکیورٹی حکام کے حوالے کر دیا۔

ترک ویب سائٹ نے نوجوان قاتل (ب، ش) کے نام کے پہلے دو حروف کا ذکر کیا ۔ اس نے 3 دن قبل اپنی والدہ کو چاقو کے وار کر کے ہلاک کیا تھا۔ 32 سالہ قاتل نے دعویٰ کیا کہ وہ نفسیاتی مسائل کا شکار تھا جس کی وجہ سے اس نے اپنی 67 سالہ والدہ کو قتل کردیا۔

قاتل نوجوان نے اعتراف کیا کہ اس نے اپنی ماں کو چاقو کے وار کر کے قتل کیا۔ اس نے پولیس کے سامنے اپنے جرم کا اعتراف کرلیا۔ قاتل نے جرم کرنے کے 15 گھنٹے بعد خود کو پولیس کے حوالے کیا۔ پولیس نے اس بات کی تصدیق کی ہے کہ ملزم کسی ذہنی بیماری کا شکار لگتا ہے۔

انقرہ میں ترک بار ایسوسی ایشن کے ایک ذریعے نے ’’العربیہ ڈاٹ نیٹ‘‘ کو بتایا کہ اگر تصدیق ہوگئی کہ قاتل واقعی کسی دماغی بیماری میں مبتلا ہے تو اسے کسی صحت کے مرکز میں منتقل کیا جا سکتا ہے۔

فرانزک رپورٹ میں انکشاف کیا گیا ہے کہ قاتل نے اپنی والدہ پر کئی مرتبہ چاقو سے وار کئے۔ اس کی ماں فوری طور پر جاں بحق ہوگئی۔ ترکیہ کی ایک ویب سائٹ پر بتایا گیا کہ قاتل کو اچانک پاگل پن کا سامنا کرنا پڑا تھا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں