مدینہ کی میٹھی اور رسیلی کھجوروں کی نمائش کا اہتمام

کھجوروں سے سعودی معیشت میں 149ملین ڈالر کا اضافہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

سعودی عرب میں 'مدینہ سے دنیا بھر کے لیے' کی تھیم کے ساتھ مدینہ کی سوغات میٹھی اور رسیلی کھجوروں کی نمائش کا اہتمام ایک باضابطہ موسمی و ثقافتی سرگرمی کی شکل اختیار کر گئی۔

سعودی عرب میں کھجوروں کی پچھلے صرف تین ماہ کے دوران پیداوار 50 ملین کلو گرام رہی۔ جن سے مجموعی طور پر سعودی معیشت میں 149 ملین ڈالر سے زائد کا اضافہ ممکن ہوا ہے۔

'مدینہ سے دنیا بھر کے لیے' کے نام اور تھیم سے کھجوروں کی اس نمائش میں کسان کھجوروں کی مختلف انواع اور افادیت کے علاوہ سعودیہ عرب میں کھجوروں کی کاشت اور فروغ کے بارے میں نمائش دیکھنے آنے والوں کو آگاہ کرتے ہیں۔

اس سلسلے میں فصلوں کی نگہداشت کے علاوہ پھل کی حفاظت کے لیے ادویات کے استعمال بارے بھی آگاہ کیا جاتا ہے۔ نمائش دیکھنے کے لیے کھجوروں کی کاشت میں دلچسپی لینے والے کسانوں کی بڑی تعداد کے علاوہ تاجر حضرات اور عام شائقین کھجور بھی بڑی تعداد میں آتے ہیں۔

اس موقع پر ان کے لیے تربیتی ورکشاپس کا اہتمام بھی کیا جاتا ہے۔ نیز ماہرین کھجور کی معاشی اہمیت اور کسانوں کو یا تاجروں کو ہونے والے منافع کے بارے میں بھی بریفنگ دیدتے ہیں۔

ایمن السید ماحولیات پانی اور زراعت کی وزارت کی علاقائی ذمہ دار ہیں۔ انہوں نے اس نمائش کے موقع پر بات کرتے ہوئے کہا ' اس نمائش کے اس سیزن میں ایک خیمہ زرعی خدمات اور رہنمائی کا بطور خاص لگایا جاتا ہے۔

یہ خیمہ کھجوروں کی نیلامی کے لیے قائم بڑے بازار سے متصل لگایا جاتا ہے۔ تاکہ مارکیٹ میں کھجور لانے والے کسانوں کو مزید رہنمائی اور مدد کی فراہمی ممکن بنائی جا سکے۔ تاکہ وہ کھجور کی بہترین اقسام ، ان کی کاشت اور نگہداشت کے مسائل سے اچھی طرح واقفیت پیدا کر سکیں۔

اس موقع پر کھجوروں کے پودوں کے لیے آبپاشی کے طریقوں اور ان کی 'نامیاتی' پیداوار ممکن بنانے کے طریقوں پر بھی بات کی جاتی ہے۔

ایمن السید نے مزید کہا ایک خیمہ بطور خاص زرعی لائسنس اور روزگار کے بارے میں معلومات اور رہنمائی کی خاطر لگایا جاتا ہے۔ اس خیمے سے کسانوں کے لیے زرعی قرضوں کے بارے میں بھی رہنمائی دی جاتی ہے اور کیڑے مار ادویات کے حوالے سے بھی بتایا جاتا ہے۔

ایمن السید نے یہ بھی بتایا 'پچھلے ماہ 42 ملین کلو کھجوروں کی پیداوار ہوئی۔ اس پیداوار کی ماالیت 141 ملین ڈالر رہی۔‘

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں