ہٹلر نے یہودیوں کے لیے افریقی ملک مڈگاسکر میں الگ وطن بنانے کی کوشش کی تھی

یہودیوں کو افریقی براعظم تک پہنچانے کا خیال انیسویں صدی کے آخر اور بیسویں صدی کے آغاز میں سامنے آیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

19ویں صدی کے اواخر اور 20ویں صدی کے آغاز کے درمیان یورپ نے پرانے براعظم میں رہنے والے یہودیوں کی منتقلی اور یہودیوں کو افریقی براعظم کے دوسرے خطوں میں منتقل کرنے کے لیے بہت سے تجاویز پیش کیں۔ اسی طرح جیسے سیاہ فام امریکیوں کے ساتھ کیا ہوا جنہیں افریقہ لے جا کر لائبیریا کی ریاست قائم کی گئی تھی۔ یا آزاد کیے گئے غلاموں کو برطانیہ نے سیرا لیون پہنچایا تھا۔ ان تجاویز میں افریقی براعظم پر یہودیوں کے لیے ایک وطن کے قیام کا مطالبہ بھی کیا گیا تھا۔

جرمن مستشرق پال ڈی لیگارڈ نے اپنی کتاب "جرمن رائٹنگز" میں یہودیوں کو مڈگاسکر پہنچانے کا خیال پیش کیا۔ بیسویں صدی کے آغاز میں روسی یہودیوں کو مشرقی افریقہ کی برطانوی کالونی، جو اب کینیا ہے، پہنچانے کا خیال ابھر کر سامنے آیا۔ کچھ ہی عرصے بعد اس خیال کو صہیونی کانگریس کی طرف سے فرضی قرار دینے کے بعد ختم کر دیا گیا۔

1930 کی دہائی کے دوران یورپی یہودیوں کو مڈگاسکر پہنچانے کا منصوبہ سامنے آیا۔ اس وقت پولینڈ نے جنوب مشرقی افریقہ میں واقع اس جزیرے پر لاکھوں یہودیوں کو منتقل کرنے کے امکان کے بارے میں بات کی تھی۔ تاہم جلد ہی یہ خیال بھی ترک کر دیا گیا۔

نازیوں کے عروج کے ساتھ ایڈولف ہٹلر نے جرمنی کا کنٹرول سنبھال لیا۔ اس دوران بہت سے یہودی جرمن سرزمین چھوڑ کر دنیا کے مختلف خطوں میں چلے گئے۔ نازی دھمکیوں کی پالیسی اپنے اہداف حاصل کرنے میں ناکام رہی کیونکہ یہودیوں کی اکثریت جرمنی میں رہنے اور نازیوں کی طرف سے ان کے ساتھ فراہم کردہ ناقص سلوک کو برداشت کرنے کو ترجیح دیتی ہے۔ اس صورتحال کا سامنا کرتے ہوئے یہودیوں کو مڈگاسکر بھیجنے کا خیال ایک بار پھر سامنے آیا۔ 1940 میں اسے ایک سرکاری منصوبے میں تبدیل کر دیا گیا۔

جون 1940 کے اوائل میں جرمن سفارت کار اور وزارت خارجہ کے اہلکار فرانز ریڈماکر نے یورپی یہودیوں کو مڈگاسکر پہنچانے کا خیال پیش کیا۔ مڈگاسکر اس وقت جنوب مشرقی افریقہ میں ایک فرانسیسی کالونی تھی۔

ایڈولف ہٹلر کے تعاون سے اگست 1940 کے وسط میں ایس ایس کے عہدیدار ایڈولف ایچ مین نے ایک رپورٹ ’’ مڈگاسکر پروجیکٹ‘‘ جاری کی جس میں اس نے 4 سال تک سالانہ دس لاکھ یہودیوں کو تقریباً 120 تجارتی جہازوں پر مڈگاسکر لے جانے کے امکان کی تجویز دی تھی ۔ تاہم اس منصوبے پر بھی عمل نہیں ہوسکا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں