ترکمانستان کے خفیہ ادارے کے کتے ’’ اخان‘‘ کو سب سے دلیر کتے کا خطاب مل گیا

ترکمانستان میں الابائی نسل کے کتے کو بہت عزت دی جاتی ، مقابلہ جیتنے پر نسل کو مزید نمایاں مقام حاصل

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

ترکمانستان کی وزارت قومی سلامتی (انٹیلی جنس) سے تعلق رکھنے والے ایک کتے کو ایک مقابلے میں سال کے سب سے بہادر کتے کے خطاب دیا گیا ہے۔ اس اعزاز سے الابائی نسل کے کتے کو نمایاں مقام ملا ہے۔ اس نسل کے کتوں کو پہلے ہی ترکمانستان میں بہت عزت دی جاتی ہے۔

چرواہے کتوں کی اس نسل کا اس وسطی ایشیائی جمہوریہ کی شناخت سے گہرا تعلق ہے۔ اسے موجودہ صدر کے والد سابق رہنما گربنگولی بردی محمدوف کے دور حکومت میں قومی علامت کا درجہ دیا گیا تھا۔

سرکاری اخبار " نیوٹرل ترکمانستان" نے پیر کے روز کہا کہ اس سال الابائی کے سب سے بہادر کتے کا اعزاز وزارت قومی سلامتی کے کتے ’’اخان‘‘ کو دیا گیا ہے۔

ترکمانستان میں سے سے دلیر کتا
ترکمانستان میں سے سے دلیر کتا

سرکاری ٹیلی ویژن نے مقابلے کی تصاویر دکھائیں جن میں یہ بہت بڑا سفید کتا اور اس کے ٹرینر سپاہی ایم۔ انمیرادوف، پس منظر میں صدر سردار بردی محمدوف کی ایک بڑی تصویر دکھائی دے رہی ہے۔

اگرچہ الابائی کو وسطی ایشیائی چرواہے کتوں کی ذیلی نسل سمجھا جاتا ہے لیکن ترکمانستان میں اس کی بہت زیادہ عزت کی جاتی ہے۔ اس ملک کے میڈیا میں اس کتے کا احاطہ کیا جاتا ہے جو آزادی صحافت کے لیے "رپورٹرز ودآؤٹ بارڈرز" تنظیم میں سب سے نیچے ہے۔

ترکمانستان کے دارالحکومت اشک آباد کے وسط میں 15 میٹر اونچی سنہری یادگار ہے جو کتوں کی الابائی نسل کی نمائندگی کرتی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں