سعودی عرب میں بچھو کی ایک نئی قسم کی دریافت، اس کی خصوصیات کیا ہے؟

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی عرب میں نیشنل سینٹر فار وائلڈ لائف ڈویلپمنٹ نے بچھو کی ایک نئی قسم کی دریافت کرنے کا انکشاف کیا ہے۔ اس نئی قسم کو مرکز کی ایک ٹیم نے دریافت کیا تھا۔ یہ بچھوں مجامع الھضب ریزرو سے دریافت ہوا ۔ اس بنا پر اس کو اسی نام سے منسوب کیا گیا ہے۔

مرکز نے "ایکس" پر اپنے اکاؤنٹ کے ذریعے وضاحت کی کہ یہ بچھو درمیانے سے بڑے سائز کا ہے اور اس کا تعلق Buthidae خاندان سے ہے۔ اس بچھو کی لمبائی 66-113 ملی میٹر تک ہوتی ہے۔

یہ بھی بتایا گیا کہ بچھو کا رنگ پیلا یا پیلا نارنجی ہے۔ اس کو پشت کی طرف اور دم کی چوتھی اور پانچویں حصے پر سیاہ پن کی موجودگی سے پہچانا جاتا ہے۔ یہ نسل سعودی عرب میں مقامی ہے اور رجسٹرڈ تھی۔ نیشنل سینٹر فار وائلڈ لائف ڈویلپمنٹ کے مجامع الھضب ریزرو میں ایک نئی نسل کے طور پر اس کو رجسٹرڈ کرلیا ہے۔

مرکز نے وضاحت کی کہ اس قسم کا بچھو دن کے وقت گھنے پودوں والی وادیوں اور دوسرے جانوروں کے بلوں میں پتھروں کے نیچے چھپ جاتا ہے اور رات کو اپنے شکار کی تلاش میں سرگرم رہتا ہے اور کیڑوں کو بھی کھاتا ہے۔

واضح رہے مجامع الھضب ریزرو ایک نیچرل ریزرو ہے جو سعودی عرب میں مکہ مکرمہ کے علاقے میں رنیہ شہر کے مشرق میں واقع ہے۔ ریزرو کو اس کے آتش فشاں علاقے کی وجہ سے سیاہ لاوے کی چٹانوں اور ریتیلے صحرا کی وجہ سے ممتاز شمار کیا جاتا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں