نیو یارک: مسلمان شخص کو ہراساں کرنے والے اوباما کے سابق مشیر گرفتار

اگر ہم نے چار ہزار فلسطینی بچوں کو مارا ہے تو یہ ناکافی ہے: سٹوورٹ سیلڈووٹز

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

نیویارک پولیس نے جمعرات کو سابق اوباما انتظامیہ کے اہلکار سٹوورٹ سیلڈووٹز کو گرفتار کرلیا، جن کی حال ہی میں سوشل میڈیا پر فوڈ سٹال پر کام کرنے والے ایک مسلمان شخص کو ہراساں کرنے کی ویڈیو وائرل ہوئی تھی۔

وائرل ویڈیو میں مین ہیٹن میں سائیڈواک پر سیلڈووٹز کو ایک مسلمان شخص کو بار بار ہراساں کرتے اور یہ کہتے ہوئے سنا جاسکتا ہے: ’اگر ہم نے چار ہزار فلسطینی بچوں کو مارا ہے تو یہ ناکافی ہے۔‘

بدھ کو سوشل میڈیا پر وائرل ہونے والی ویڈیو میں سابق اوباما انتظامیہ کے اہلکار سٹوورٹ سیلڈووٹز نیویارک میں فوڈ سٹال پر کام کرنے والے ایک مسلمان شخص کو بار بار ہراساں کرتے ہوئے کہتے ہیں کہ ’اگر ہم نے چار ہزار فلسطینی بچوں کو مارا ہے تو یہ ناکافی ہے‘۔

سٹوررٹ سیلڈووٹ
سٹوررٹ سیلڈووٹ

ویڈیو میں دیکھا جا سکتا ہے کہ سٹوررٹ سیلڈووٹز متعدد بار فوڈ سٹال پر جا کر مسلمان شخص کو ہراساں کرتے ہیں اور اسلام مخلاف کلمات بار بار دہراتے ہیں جس کے مقابلے میں سٹال پر کام کرنے والا شخص اسے بار بار وہاں سے جانے کے لیے کہتا ہے۔

تاہم سیلڈووٹز جانے کے بجائے مسلمان شخص کو اکسانے کی کوشش کرتے رہتے ہیں اور کہتے ہیں: ’تم دہشت گرد ہو اور دہشت گردی کی حمایت کرتے ہو۔‘

سٹوررٹ سیلڈووٹز امریکی محکمہ خارجہ کے ساتھ وابسطہ رہ چکے ہیں اور سابق صدر براک اوباما کی قومی سلامتی کونسل میں جنوبی ایشیا ڈائریکٹوریٹ کا حصہ رہ چکے ہیں۔

سیلڈووٹز نے ڈبلیو این بی سی ٹیلی وژن کو بتایا تھا: ’میں نے وہ باتیں (اس شخص) کو دہشت گردی کی حمایت پر کی تھیں اور میرے خیال میں وہ ٹھیک ہیں۔‘

تاہم ویڈیو میں مسلمان شخص کوئی متنازع بات کرتے سنائی نہیں دیتے بلکہ اوباما کے سابق مشیر سے کہتے ہیں، ’میں یہ نہیں سنوں گا،‘ اور ان کو جانے کا کہتے رہتے ہیں۔

رائٹرز کا سیلڈووٹز سے تبصرے کے لیے رابطہ قائم نہ ہو سکا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں