بمباری سے بچ کر سفید جھنڈا اٹھانے والے فلسطینی بچے کی ویڈیو وائرل

فلسطینی باپ غزہ پر اسرائیلی بمباری دوبارہ شروع ہونے کے بعد دو بچوں کو پناہ گاہوں میں منتقل کرنے میں کامیاب ہو گیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

غزہ کی پٹی میں جنگ کو 57 دن ہوگئے ہیں۔ ہر روز لاکھوں المناک کہانیاں اور ویڈیوز نمودار ہو رہی ہیں۔ مسلسل اسرائیلی بمباری سے پٹی کے رہائشیوں کے مصائب کی نت نئے انکشافات سامنے آرہے ہیں۔ سامنے آنے والی ویڈیو کلپس میں سے ایک کے مطابق ایک فلسطینی باپ غزہ کی پٹی پر دوبارہ اسرائیلی بمباری شروع ہونے کے بعد اپنے دو چھوٹے بچوں کو پناہ گاہوں میں منتقل کر رہا اور ویڈیو بنا رہا ہے۔

Advertisement

ایک 3 سالہ بچہ بھی ہے۔ والد اس سے پوچھتا ہے کہ کیا وہ ڈر رہا ہے تو اس نے جواب دیا "نہیں"۔ اس کی چار سالہ بہن نے کہا کہ وہ ڈر رہی ہے۔ باپ نے چھوٹا سا بیگ کمر پر لادے اپنے بیٹے سے پوچھا کہ کیا وہ جانتا ہے کہ وہ سفید جھنڈا کیوں اٹھائے ہوئے ہے تو بچے نے جواب دیا کہ وہ یہ بات نہیں جانتا۔ اس دوران شدید بمباری کی آوازیں بھی سنائی دے رہی ہیں۔ سات اکتوبر کو جنگ شروع ہونے کے بعد 24 نومبر کو جنگ بندی شروع ہوئی اور یکم دسمبر کو دوبارہ اسرائیل نے بمباری شروع کردی۔ ہفتہ دو دسمبر کو بھی اسرائیل نے غزہ پر خوفناک بمباری کی۔ جنگ کے شروع ہونے کے بعد 57 ویں دن تک فلسطینی شہدا کی تعداد 15 ہزار 207 اور زخمیوں کی تعداد 40 ہزار سے زیادہ ہوگئی ہے۔ جنگ کے 56 ویں اور 57 ویں دن کے دوران نئی سرے سے شروع ہونے والے اسرائیلی حملوں میں 240 فلسطینی جاں بحق اور 650 زخمی ہوگئے ہیں۔ اسرائیلی فوج نے بتایا کہ ان دو دنوں میں اس نے 400 سےزیادہ اہداف پر حملے کئے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں