کِم جونگ اُن کی نئی کار دیکھئے، 4 ماہ میں 5 ممالک سے سمگل کیا گیا

"مے باکھ" کے نشان والی کار کو سلامتی کونسل نے شمالی کوریا کو برآمد کرنے سے منع کر رکھا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

شمالی کوریا کے رہنما کم جونگ اُن نے اپنی ذاتی گاڑی کی جگہ ایک ایسی لگژری غیر ملکی گاڑی لے لی ہے جسے ان کے ملک میں برآمد کرنے پر پابندی ہے۔ 11 سالوں میں ’’ فرسٹ نیشنل کانفرنس فار مدرز‘‘ کے دوران کم جونگ ان ایک نجی گاڑی میں پہنچے۔ یہ کانفرنس تین اور چار دسمبر کو پیانگ یانگ میں منعقد ہوئی۔

جنوبی کوریائی میڈیا کے مطابق کار کے ٹیل گیٹ پر "Maybach" بیج اور اس کے ٹرنک پر "S650" نمبر موجود ہے۔ چینل نے کہا کہ ایک نئی جرمن مرسڈیز "مے باکھ" 2019 تک بھیجی گئی تھی۔

چونکہ کم جونگ اُن نے گزشتہ ستمبر میں روس کے دورے کے دوران سابق نجی کار کو ٹرین میں استعمال کیا تھا۔ اس لیے ایسا معلوم ہوتا ہے کہ اسے پچھلے ایک یا دو ماہ میں جرمن کار نے تبدیل کر دیا ہے۔

واضح رہے مرسیڈیز "مے باکھ" ایس 650 بہترین کاروں میں سے ایک ہے۔ اس کی قیمت کروڑوں کوریائی وون ہے۔ اسے ایک لگژری چیز کے طور پر جانا جاتا ہے۔ اور یہ اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی شمالی کوریا کو برآمدات پر پابندی کی زد میں آتی ہے۔ نیویارک ٹائمز کی جانب سے 2019 میں شمالی کوریا جانے والی مرسڈیز بینز کاروں کے راستے کا پتہ لگانے کے نتیجے میں یہ پتہ چلا کہ انہیں 4 ماہ کے عرصے میں 5 ممالک کے ذریعے سمگل کیا گیا تھا۔

اس بات کا قوی امکان ہے کہ شمالی کوریا کے خلاف سلامتی کونسل کی لگژری اشیا کی برآمد ک پابندیوں میں ایک اور خامی سامنے آگئی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں