آسٹریلیا کے ٹینس کورٹ میں زہریلے سانپ کی آمد، 40 منٹ کے لیے میچ رک گیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

آسٹریلیا میں جاری ٹینس ٹورنامنٹ کے درمیان ایک انوکھا واقعہ پیش آیا ہے جب ٹینس کورٹ میں زہریلے سانپ کے آنے کے باعث میچ کو روکنا پڑ گیا۔

فرانسیسی خبر رساں ادارے اے ایف پی کے مطابق آسٹریا سے تعلق رکھنے والے سابق یو ایس اوپن چیمپیئن ڈومینیک تھیم اور آسٹریلوی کھلاڑی جیمز مککابے کے درمیان برسبین انٹرنیشنل کے میچ کو زہریلے سانپ کے ٹینس کورٹ میں آنے کے باعث روکنا پڑ گیا۔

دونوں کھلاڑیوں کے درمیان میچ جاری تھا کہ اچانک ’ایسٹرن براؤن سنیک‘ کی قسم کے زہریلے سانپ کو کورٹ میں تماشائیوں کے سامنے بجلی کی تاروں میں دیکھا گیا۔

سانپ کے برآمد ہونے کے بعد کھیل 40 منٹ تک رُکا رہا جس کے بعد سنیک کیچر کو سانپ پکڑنے کے لیے آنا پڑا اور سانپ کو بیگ میں ڈالنا پڑا۔

آسٹریلین میوزیم کی ویب سائٹ کے مطابق ایسٹرن براؤن سانپ زہر سے بھرپور ہوتے ہیں جن کے ڈسنے کے باعث تیزی سے خون بہتا ہے اور انسان تیزی سے مفلوج ہو جاتا ہے۔

خیال رہے آسٹریلیا میں دنیا کے 25 زہریلے ترین سانپوں میں سے 20 سانپوں کی اقسام پائی جاتی ہیں تاہم ان سانپوں سے اموات کی شرح بہت کم ہے۔

دوسری جانب ڈومینیک تھیم نے میچ میں اپنے آسٹریلوی حریف جیمز مککابے کو شکست دے دی تھی۔

مقبول خبریں اہم خبریں