کیا والدین کے چہرے کے تاثرات بچوں میں پسند اور ناپسند کے تعین میں مدد کرتے ہیں؟

بچوں میں سبزیاں نہ کھانے کا رحجان ان کے والدین کے چہرے کے منفی تاثرات کا نتیجہ ہوسکتا ہے: ماہرین

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

والدین کو اکثر اپنے بچوں کو سبزیاں کھانے پر راضی کرنے میں دشواری کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔ برطانوی اخبار ’’ڈیلی میل " کے مطابق اس معاملے میں جو نئی تحقیق کے نتائج سے پتہ چلتا ہے کہ والدین کے چہرے کے تاثرات اس کی وجہ ہو سکتے ہیں۔

والدین کے چہرے کے تاثرات

برطانیہ کی آسٹن یونیورسٹی کے محققین نے دریافت کیا کہ دوسروں کو دیکھنا، مثال کے طور پر والدین، سبزیاں کھانے کے لیے اپنی ناپسندیدگی کا واضح طور پر اظہار کرتے ہوئے بچوں کو بھی یہی احساس دلاتے ہیں۔

منفی نتائج

اس تحقیق کی سرکردہ محقق ڈاکٹر کیٹی ایڈورڈز نے کہا کہ ’’اگر کوئی بچہ اپنے والدین کو سبزیاں کھاتے ہوئے بیزاری کا مظاہرہ کرتے ہوئے دیکھتا ہے، تو اس کے بچوں کے سبزیوں کو قبول کرنے پر منفی اثرات مرتب ہو سکتے ہیں‘‘۔

کچی بروکولی

محققین نے غور کیا کہ آیا کسی اور کو کھاتے ہوئے دیکھنا ان کی اپنی ترجیحات پر اثرانداز ہوتا ہے یا نہیں۔ اس تحقیق میں صرف 200 سے زیادہ نوجوان خواتین نے حصہ لیا، جہاں انہیں ایک بالغ عورت کی کچی بروکولی کھاتے ہوئے ویڈیو کلپ دکھائی گئی۔ کھانا کھاتے وقت ویڈیو میں موجود ماڈل کے چہرے کے مثبت، غیر جانبدار یا منفی تاثرات تھے۔

ویڈیو دیکھنے کے بعد شرکاء سے پوچھا گیا کہ وہ کچی بروکولی کتنا کھانا چاہتے ہیں اور نئی تحقیق کے نتائج سے یہ بات سامنے آئی کہ جن شرکاء نے ویڈیو کلپس دیکھے، جن میں چہرے کے منفی تاثرات تھے، ان کی پسند کی درجہ بندی میں بہت زیادہ کمی آئی۔

ناپسندیدگی اور بیزاری

محقق ایڈورڈز نے وضاحت کی کہ "دوسروں کو کچی سبزیاں کھاتے ہوئے چہرے کے مثبت تاثرات کے ساتھ دیکھنے سے بالغوں کی سبزیوں کے لیے پسندیدگی یا کھانے کی خواہش میں اضافہ نہیں ہوا۔" محققین بتاتے ہیں کہ ناگوار معلوم ہونے والے کھانے سے پرہیز کرنا کسی نقصان دہ چیز کو کھانے سے بچا سکتا ہے، لیکن اس کے ساتھ ساتھ کھانا کھاتے وقت مسکرانا اور پسند کرنا کھانے کی محبت کا عام مظاہرہ نہیں ہے، اور مسئلہ یہ ہے کہ بیزاری کا اظہار اسی طرز عمل کی نقل کرنے کا باعث بنتا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں