غزہ جنگ: بائیکاٹ مہم امریکی 'سٹار بکس' اور 'مکڈونلڈ' کے لیے ڈروانا خواب بن گئی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سال 2023 کے دوران آخری سہ ماہی بین الاقومی 'فوڈ چین مکڈونلڈ' کے لیے مشرق وسطیٰ میں بطور خاص اچھی ثابت نہیں ہوئی ہے۔ غزہ جنگ کی وجہ سے بہت سی مارکیٹوں میں 'مکڈونلڈ' کا بزنس اور آمدنی نیچے چلی گئی۔

مشرق وسطیٰ میں 'مکڈونلڈ' کے گاہکوں نے اس بات کا برا منایا کہ 'مکڈونلڈ' نے غزہ میں لڑنے والی اسرائیلی فورسز کو مفت کھانا پیش کیا ہے۔ یہ اطلاع ماہ اکتوبر 2023 میں سامنے آئی۔ جب ابھی 7 اکتوبر سے شروع ہونے والی اسرائیل حماس جنگ اپنے ابتدائی دنوں میں تھی۔

ان خبروں کا متعلقہ 'مکڈونلڈ' فرنچائزیز میں فروخت پر کافی برا اثر ہوا۔ ان اثرات کے ازالے کے لیے اومان اور بعض دیگر جگہوں پر 'مکڈونلڈ' کے فرنچائزیز نے غزہ میں امدادی سرگرمیوں کے لیے عطیات کا اعلان کرنا شروع کر دیا۔ لیکن اس کے باوجود مشرق وسطیٰ میں بطور خاص 'مکڈونلڈ' کی بائیکاٹ مہم کے اثرات موجود رہے۔

'مکڈونلڈ' کے سی ای او نے اعلان کیا کہ ان کے ادارے کے بارے میں اسرائیلی فوج کو مفت کھانا پیش کرنے کی خبریں درست نہیں ہیں اور یہ بھی درست نہیں ہے کہ 'مکڈونلڈ' کی سیل متاثر ہوئی ہے۔ تاہم گاہگوں کے بائیکاٹ کی وجہ سے اور احتجاج کی وجہ سے 'مکڈونلڈ' کو عارضی طور پر اپنے آؤٹ لیٹس کے نظام الاوقات کو تبدیل کرنا پڑا اور بعض جگہوں پر بند بھی کرنا پڑا۔

'مکڈونلڈ' کے چیف ایگزیکٹیو آفیسر نے کہا ہمارا کسی بھی قسم کے تشدد سے تعلق نہیں ہے اور ہم نفرت پر مبنی تقریروں کے خلاف ہیں۔ ہم ہمیشہ فخر سے اپنے دروازوں کو ہر ایک کے لیے کھلا رکھیں گے۔ چیف ایگزیکٹیو آفیسر کی یہ پوسٹ 'لنکڈ ان' پر سامنے آئی۔ تاہم سال کے اختتام پر یہ اندازہ ہوا کہ یہ برگر فروخت کرنے والے ایک بڑے ادارے کے لیے غیر متوقع سال تھا یا دوسرے لفظوں میں ایک بھاری سال تھا۔

'مکڈونلڈ' صرف اکیلی امریکی 'فوڈ چین' نہیں تھی جس نے اسرائیل غزہ جنگ کے باعث حالیہ مہینوں میں مشکل صورتحال کا سامنا کیا۔ کہ مشرق وسطیٰ میں اسے بائیکاٹ کا سامنا کرنا پڑا۔ 'مکڈونلڈ' کے ساتھ ساتھ معروف امریکی کافی کمپنی 'سٹاربکس' کو بھی غزہ میں اسرائیلی جنگ کے باعث اسی طرح بائیکاٹ مہم کا سامنا کرنا پڑا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں