روڈ انفراسٹرکچر: سعودی عرب جی 20 ممالک میں چوتھے نمبر پر آگیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

ورلڈ اکنامک فورم کی رپورٹ برائے سال 2023 میں انکشاف کیا گیا ہے کہ سعودی عرب سڑک کے بنیادی ڈھانچے کے معیار کے انڈیکس میں 5.7 کی سطح پر ترقی کر گیا ہے۔ رپورٹ نے سعودی عرب کو جی 20 ممالک میں عالمی سطح پر چوتھے نمبر پر رکھا ہے۔ روڈ انفراسٹرکچر کا عالمی انڈیکس معیار سب سے اہم عالمی اشاریوں میں سے ایک ہے جو سڑکوں کے نیٹ ورک کے معیار کی سطح کی بنیاد پر پیمائش کرتا ہے۔

اتھارٹی نے العربیہ ڈاٹ نیٹ کو دیے گئے خصوصی بیانات میں کہا کہ یہ اشارے سڑک کے شعبے کی حکمت عملی کے اہداف کے حصول میں معاون ثابت ہوں گے جس کی منظوری گزشتہ سال کے آغاز میں وزراء کی کونسل نے دی تھی۔ سعودی عرب میں سڑکوں کے سیکٹر میں گزشتہ برسوں میں زبردست سرگرمی کا مشاہدہ کیا جا رہا ہے۔ اس حوالے سے جنرل اتھارٹی فار روڈز کا قیام سب سے اہم اقدامات میں سے ایک تھا۔

سعودی عرب کی ایک شاندار سڑک
سعودی عرب کی ایک شاندار سڑک

ٹرانسپورٹ اور لاجسٹکس سروسز کے وزیر اور جنرل اتھارٹی فار روڈز کے بورڈ آف ڈائریکٹرز کے چیئرمین انجینئر صالح الجاسر نے بتایا کہ بین الاقوامی اشاریوں میں ٹرانسپورٹ اور لاجسٹکس سسٹم کے مختلف حصوں کی جانب سے کی گئی یہ پیشرفت خادم حرمین شریفین اور ان کے ولی عہد کی لامحدود حمایت کے باعث ہے۔

جنرل اتھارٹی فار روڈز کے قائم مقام سی ای او بدر الدلامی نے تصدیق کی ہے کہ 2023 کے دوران سڑک کے شعبے میں آنے والی عظیم اور متحرک اقدامات نے اس کامیابی کو حاصل کرنے میں اہم کردار ادا کیا ہے۔ جنرل اتھارٹی فار روڈز نے وضاحت کی کہ ورلڈ اکنامک فورم کی جانب سے جاری کردہ رپورٹ میں انکشاف کیا گیا ہے کہ سعودی عرب میں سڑکوں کے بنیادی ڈھانچے کے معیار کا انڈیکس 5.2 سے بڑھ کر 5.7 ہو گیا ہے جو تقریباً 10 فیصد سے زیادہ شرح نمو ہے۔

یہ بات قابل غور ہے کہ جنرل اتھارٹی فار روڈز سڑکوں کے نیٹ ورک کے نگران اور منتظم کے طور پر اپنے کردار کی بنیاد پر سڑکوں کے نیٹ ورک کی حفاظت اور معیار کو بلند کرنے کے لیے کام کر رہی ہے۔ یہ روڈ کنیکٹیویٹی انڈکس میں دنیا میں پہلے نمبر پر ہے۔ اتھارٹی سڑک کے شعبے کی حکمت عملی کے مقاصد کے حصول کے لیے بھی کام کر رہی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں