بڑی عمر کے لوگ ایموجیز کا غلط استعمال کرتے ہیں: نئی تحقیق

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

ایک نئی تحقیق سے پتا چلا ہے کہ بڑی عمر کے لوگ ایموجی کو غلط طریقے سے استعمال کرتے ہیں، اور ان کے معنی ایک ملک سے دوسرے ملک میں بہت زیادہ مختلف ہو سکتے ہیں۔

ایموجیز چھوٹے پیلے رنگ کی علامتیں ہیں جو ٹیکسٹ میسجز اور سوشل میڈیا پوسٹس میں عام استعمال ہوتی ہیں۔

برطانوی "ڈیلی میل" کے مطابق، یونیورسٹی آف ناٹنگھم کے سائنسدانوں نے دریافت کیا کہ بڑی عمر کے لوگ پیغامات میں ایموجیز کا انتخاب کرنے میں نوجوان لوگوں کے مقابلے میں کم کامیاب ہوتے ہیں۔ جس کا مطلب ہے کہ بوڑھے لوگوں کے نامناسب ایموجیز بھیجنے کا امکان زیادہ ہوتا ہے، جیسے کہ مسکراہٹ والا چہرہ یا۔ .. ناراض چہرہ، غلط وقت پر بھیجنے کا امکان بھی ہو سکتا ہے۔

غصہ اور گرم موسم

محققین کے مطابق اگر کوئی نوجوان، مثال کے طور پر، کسی بزرگ رشتہ دار یا جاننے والے سے سرخ، پسینے سے آلودہ چہرے اور زبان باہر نکلی ہوئی ایموجی وصول کرتا ہے، تو اس کا مطلب صرف یہ بھی ہو سکتا ہے کہ ایئر کنڈیشنر کو آن کرنے کی ضرورت ہے۔

محققین نے برطانیہ اور چین کے 500 مردوں اور عورتوں سے ایموجیز کی ایک سیریز میں دکھائے گئے جذبات کی شناخت کرنے کو کہا -

چین میں مسکراتا چہرہ

مطالعہ کے شرکاء نے خوشی، نفرت، خوف، اداسی، تعجب اور غصے کی نمائندگی کرنے والے ایموجیز کو

دیکھا۔ عام طور پر، مغربی باشندوں نے اظہاری جذبات کو پہچاننے میں چینیوں سے بہتر کارکردگی کا مظاہرہ کیا، لیکن "ناگوار" چہرے کو پہچاننے میں دشواری کا سامنا کرنا پڑا۔ محققین نے کہا کہ یہ "مختلف ثقافتوں میں مخصوص جذباتی تجربات" کی وجہ سے ہو سکتا ہے۔

محققین نے یہ بھی بتایا کہ چین میں، "مسکراہٹ" والا چہرہ اکثر خوشی کے علاوہ جذبات کی نمائندگی کے لیے بھی استعمال ہوتا ہے۔

مطالعہ کی سرکردہ محقق ڈاکٹر ہننا ہومن نے کہا: "عمر اور ثقافت کے حوالے سے ہمارے نتائج ایموجی کے استعمال میں سیاق و سباق کی اہمیت کو اجاگر کرتے ہیں، مثال کے طور پر، اس بات کا امکان کہ چین میں شرکاء 'مسکراہٹ' ایموجی کو مختلف چیزوں کے لیے استعمال کر سکتے ہیں۔جس کا مطلب ہے کہ ایموجیز میں منتقل ہونے پر چہرے کے کچھ "آفاقی" جذبات اتنے "عالمگیر" نہیں ہو سکتے۔


ایموجی کی مقبولیت

برطانیہ سب سے زیادہ ایموجی استعمال کرنے والے ممالک میں سے ایک ہے، جہاں 50% صارفین روزانہ کم از کم ایک ایموجی بھیجتے ہیں۔

محققین نے انکشاف کیا کہ ایکس پر انگریزی زبان کی پوسٹس بھی ایموجیز سے بھری ہوئی تھیں جو چینی سوشل میڈیا پلیٹ فارم ویبو سے کہیں زیادہ ہیں۔

مرد کم حساس ہوتے ہیں

تحقیق کے نتائج نے یہ بھی اشارہ دیا کہ مردوں کو ایموجیز کا مطلب سمجھنا مشکل ہوتا ہے کیونکہ وہ خواتین کے مقابلے میں کم حساس ہوتے ہیں، جنہوں نے تمام شعبوں میں بہتر کارکردگی کا مظاہرہ کیا۔

یونیورسٹی آف ناٹنگھم سے تعلق رکھنے والی ییہوا چن نے کہا: "خواتین جذبات کو پہچاننے میں مردوں کی نسبت زیادہ درستگی کا مظاہرہ کرتی ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں