تصاویر: الجزائر میں دنیا کی تیسری بڑی مسجد کا افتتاح

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

الجزائر کے صدر عبدالمجید تبون نے باضابطہ طور پر الجزائر کی مسجد کا افتتاح کیا جو دنیا کی تیسری سب سے بڑی اور افریقہ کی سب سے بڑی مسجد ہے۔ اس مسجد میں پہلی نماز 2020میں ادا کی گئی تھی اور اس وقت صدر کووڈ 19 وبا کی وجہ سے اس نماز میں شرکت نہ کرسکے تھے۔ سرکاری ٹیلی ویژن پر نشر ہونے والی تصاویر میں دکھایا گیا ہے کہ صدر تبون 300000 مربع میٹر کے رقبے پر پھیلی مسجد کے افتتاح کی نگرانی کے لیے مسجد پہنچے۔ یہ مسجد دارالحکومت کے مشرقی مضافاتی علاقے میں واقع ہے۔

جامع مسجد الجزائر1
Advertisement

اکتوبر 2020 میں اس وقت کے وزیر اعظم عبدالعزیز جیراد نے مسجد کا افتتاح کیا تھا، اس وقت صرف نماز گاہ کا افتتاح کیا گیا تھا جس میں 120,000 نمازی جمع ہو سکتے ہیں۔ مسجد کو فیروزے پتھر سے ڈھانپا کیا گیا ہے۔ روایتی الجزائری روایت کے مطابق پھولوں کے ڈیزائن کے ساتھ نیلے قالین بچھائے گئے ہیں۔

نماز ہال کے علاوہ الجزائر کی مسجد میں 12 عمارتیں شامل ہیں جن میں 10 لاکھ کتابوں پر مشتمل ایک لائبریری، ایک لیکچر ہال، اسلامی آرٹ اور تاریخ کا ایک میوزیماور ڈاکٹریٹ کے طلبہ کے لیے اسلامی علوم کا ایک اعلیٰ سکول شامل ہے۔ اس کا مینار اس قدر لمبا ہے کہ اسے الجزائر کے دارالحکومت کے تمام حصوں اور یہاں تک کہ ہمسایہ شہروں سے بھی دیکھا جا سکتا ہے۔ یہ دنیا کا سب سے اونچا مینار ہے، اس کی اونچائی 267 میٹر ہے۔

سابق صدر عبد العزیز بوتفلیقہ کی خواہش پر شروع ہونے والا یہ بڑا پروجیکٹ حالیہ سالوں میں اپنی لاگت کی وجہ سے بڑے تنازعے کا باعث بھی بنا رہا۔ 2013 میں اس کی تعمیر شروع ہوئی تھی۔ اس کی لاگت 750 ملین یورو سے زیادہ رقم تھی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں