سعودی کھجوروں کی برآمدات کی مالیت 14 فیصد اضافہ کے ساتھ 1.4 ارب ریال ہو گئی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی عرب کی کھجور برآمدات میں گذشتہ برس 14 فیصد اضافہ ریکارڈ کیا گیا۔

سعودی خبر رساں ادارے ’ایس پی اے‘ کے مطابق قومی مرکز برائے کھجور کے عہدیدار دار نے کہا ہے کہ سال 2023 تک سعودی عرب کی کھجوریں دنیا کے 119 ممالک میں پہنچائی جاتی تھیں جبکہ سعودی کھجور کی برآمدات میں 2016 کے مقابلے میں 152.5 فیصد اضافہ ہوا ہے۔

سینٹر کا کہنا ہے کہ آٹھ سال قبل سعودی عرب کی کھجور کی برآمدات 579 ملین ریال تھی جو کہ سالانہ کم از کم 12.3 فیصد اضافے کے ساتھ گذشتہ سال 1.4 ارب ریال تک پہنچ گئی۔

قومی سینٹر برائے کھجور کے سی ای او محمد النویران نے برآمدات میں اضافہ کے متعلق کہا کہ ’یہ اضافہ کھجور کے تاجروں اور حکومتی اداروں کے درمیان تعاون سے ممکن ہوا‘۔

محمد النویران کا کہنا تھا کہ ’حکومتی اداروں کی جانب سے مقامی وبین الاقوامی فیسٹیولز کے انعقاد کے ذریعے سعودی کھجور کو فروغ دینے اور برآمدات کو آسان بنانے کے اقدامات نے اضافہ میں اہم کردار ادا کیا‘۔

گذشتہ برس چین کو سب سے زیادہ کھجوریں ایکسپورٹ کی گئیں: فوٹو درويش آل درويش
گذشتہ برس چین کو سب سے زیادہ کھجوریں ایکسپورٹ کی گئیں: فوٹو درويش آل درويش

النویران نے مزید کہا کہ ’بین الاقوامی سطح پر سعودی کھجور کی ایکسپورٹ کے لیے مزید کوششیں کی جا رہی ہیں جن کے باعث چین، سنگاپور اور جنوبی کوریا سمیت مختلف ممالک کو کھجور کی برآمدات میں ریکارڈ اضافہ ہوا ہے۔

قومی سینٹر برائے کھجور کی جانب سے سعودی عرب کی کھجور کو عالمی خریداروں کے اولین ترجیح بنانے کے لیے نجی سیکٹر کے تعاون سے مختلف انیشیٹوز پر کام کر رہا ہے جس میں زرعی اور صنعتی پریکٹسز میں بہتری کے ذریعے کھجور کے معیار کو بہتر بنانا اور مارکیٹنگ میں سہولیات پیدا کرنا شامل ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں