دوران پرواز پائلٹ اور ساتھی سو گیا، طیارے کا رخ مڑ گیا

واقعہ جنوری میں باٹیک ایئر لائنز کی انڈونیشیا میں ڈومیسٹک فلائٹ کے دوران پیش آیا، بحفاظت لینڈنگ

حقائق تصدیق ٹرینڈنگ
پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

انڈونیشیا کی ایوی ایشن سیفٹی ایجنسی نے ایئر لائنز سے مطالبہ کیا کہ وہ کاک پٹ میں کنٹرول کو مضبوط کریں اور اس بات کو یقینی بنائیں کہ ہر پرواز سے پہلے عملے کے ارکان کو مناسب آرام ملے۔ ایجنسی نے حوالہ دیا کہ جنوری کے آخر میں دو باٹیک پائلٹ ڈومیسٹک دوران پرواز سو گئے اور طیارے کا رخ بھی مڑ گیا تھا، تاہم بعد میں بغیر کسی حادثہ کے طیارے نے لینڈنگ کرلی تھی۔

نیشنل ٹرانسپورٹیشن سیفٹی کمیٹی کی جانب سے جاری کردہ ابتدائی رپورٹ کے مطابق 25 جنوری کو شمالی انڈونیشیا کے علاقے سولاویسی سے دارالحکومت جکارتہ کے لیے پرواز کے دوران ایک پائلٹ اور اس کا کوپائلٹ تقریباً 28 منٹ تک ایک ایئربس ’’ اے 320‘‘ میں ایک ساتھ سوتے رہے تھے۔ اس حوالے سے رپورٹ ایجنسی کی ویب سائٹ پر فروری کے آخر میں پوسٹ کی گئی تھی۔

رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ پائلٹوں میں سے ایک نے پرواز سے ایک رات پہلے کافی آرام نہیں کیا تھا۔ جس کی وجہ سے نیوی گیشن کی غلطیوں کا ایک سلسلہ شروع ہوا۔ طیارے میں 153 مسافر اور چار فلائٹ اٹینڈنٹ تھے۔ لیکن مسافر طیارہ بغیر کسی نقصان کے دو گھنٹے 35 منٹ محو پرواز رہ کر بحفاظت لینڈ کر گیا۔

ٹیک آف کے تقریباً آدھے گھنٹے بعد طیارے کے پائلٹ نے اپنے شریک پائلٹ سے کچھ دیر آرام کرنے کی اجازت مانگی اور سو گیا۔ لیکن اس کا ساتھی بھی سو گیا۔ تاہم بعد میں طیارے کا کنٹرول سنبھال لیا گیا۔

انڈونیشین طیارہ ۔ فائل فوٹو
انڈونیشین طیارہ ۔ فائل فوٹو

آخری ریکارڈ شدہ ٹرانسمیشن کے اٹھائیس منٹ بعد پائلٹ بیدار ہوا اور اسے احساس ہوا کہ اس کا کو پائلٹ سو رہا تھا اور طیارہ ٹریک پر نہیں تھا۔ رپورٹ میں بتایا گیا کہ اس نے فوراً اپنے ساتھی کو جگایا۔ جکارتہ سے آنے والی کالوں کا جواب دیا اور پرواز کا راستہ درست کیا۔ اس کے بعد طیارہ بحفاظت لینڈ کر گیا۔

واضح رہے انڈونیشیا تقریباً پانچ ہزار کلومیٹر مشرق سے مغرب تک پھیلا ہوا ایک وسیع جزیرہ نما ملک ہے۔ انڈونیشیا ہوا بازی کی حفاظت کے میدان میں خراب ریکارڈ رکھتا ہے۔ اپنے ہزاروں جزائر کو جوڑنے کے لیے انڈونیشیا ہوائی نقل و حمل پر بہت انحصار کرتا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں