یوکرین کے شکست تسلیم کرنے اور اسلحہ فراہمی میں توقف ہی جنگ روک سکے گا: پوتین اتحادی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

اگر یوکرین جوہری ہتھیاروں کی صلاحیت رکھنے والے جیٹ طیاروں کو چلانا شروع کرتا ہے تو روس کے لیے بھی پہلے سرخ بٹن دبانے کی مجبوری بن جائے گی۔ یہ بات قوم پرستی کے حوالے سے بہت معروف سیاسی دانشور اور پیوتن کے اتحادی الیگزنڈر ڈوگین نے 'العربیہ' سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے کہی ہے۔

روسی صدر ولادیمیر پوتن کے سیاسی فکر و فلسفہ کے حوالے سے بہت با رسوخ شخصیت کی شہرت کے حامل ڈوگین نے الزام لگایا متحارب فریقوں اور ان کے پڑوسیوں کو درپیش اعلیٰ سطح کے جوہری خطرے کے لیے غیر ذمہ دار مغربی سیاست دانوں کا کردار اہم ہے۔ ڈوگین کے ناقدین، یہ تسلیم نہیں کرتے کہ کریملن پر ان کے اثرات ہیں۔

انہوں نے ایک سوال کے جواب میں کہا 'مغربی اشرافیہ جو لبرل ازم اور عالمگیریت کے نظریے کو اپناتے ہیں مگر یک محوری نظام کا ساتھ دیتے ہیں۔ یہ تغیر وتبدل پر غور کیے بغیر اس اصول پر قائم ہیں۔ اس لیے عملی دانش سے محروم ہیں اور نہیں جانتے کہ یوکرین کے پاس ان کے F-16 لڑاکا طیاروں کے لیے رن وے ہی نہیں۔ مگر یوکرین کو ایف سولہ بھیج رہے ہیں۔'

ڈوگین نے کہا 'جوہری جنگ جتنی آج قریب ہے ماضی میں کبھی اتنی قریب نہ آئی تھی۔' ان کا مزید کہنا تھا 'مغرب میں غالب نظریہ، جو کہ عالمگیریت اور لبرل ازم کے دعوے پر مبنی ہے لیکن وہ کسی بھی مخالف نظریے کو قبول نہیں کرتے۔'

خیال رہے روس نے یوکرین پر 24 فروری 2022 کو حملہ کیا تھا، مگر یوکرین کی جنگی صلاحیت تیزی سے ختم ہو گئی۔ اب اس کا انحصار مغربی ملکوں اور نیٹو کی طاقت پر ہے۔

یوکرین کے صدر زیلنسکی ایک لمبے عرصے سے خواہش کرتے رہے ہیں کہ انہیں ایف سولہ طیارے مل جائیں کہ ان کی وجہ سے نتائج کیئف کے حق میں آنا شروع ہو جائیں گے۔ کیونکہ روس اپنے فوجی قوت کے باوجود اس وقت دوسرے فریق کی طرح جنگی جمود میں ہے۔

ڈوگین نے لاوروف کا حوالہ دیتے ہوئے کہا 'ہم یقینی طور پر نہیں جانتے کہ آیا یہ F-16 لڑاکا طیاروں میں جوہری صلاحیت ہیں جو روس کے خلاف لانچ کیے جا سکتے ہیں۔ اس لیے روس ضرورت پڑنے پر سٹریٹجک جوہری ہتھیاروں کا استعمال کر سکتا ہے ۔ جس کے نتیجے میں اس کی زد میں پولینڈ یا یوکرین کے علاوہ لندن، نیویارک اور برلن بھی آ سکتے ہیں۔'

روسی صدر کے دماغ بن کر سوچنے والے ڈوگین نے کہا 'اگر آپ پہل کرنے کے لیے ٹائم فیکٹر کا فائدہ نہیں اٹھاتے ہیں تو آپ یقیناً دوسرے بن سکنے کی پوزیشن میں بھی نہیں رہ سکتے۔'

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں