کھانے کی پلیٹ 3 حصوں میں تقسیم کریں ، دوران روزہ متحرک رہنے کے لیے متوازن غذا لیں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

روزہ انسانی صحت کے لیے بہت سے فائدے رکھتا ہے۔ لیکن روزے کے دوران جسمانی سرگرمی کو برقرار رکھنے کے لیے رمضان کے مہینے میں متوازن غذا پر عمل کرنا ضروری ہے۔

اس تناظر میں، ماہر غذائیت رہف البوشی نے روزے کے دوران صحت مند کھانا کھانے اور ہائیڈریشن کو برقرار رکھنے کے بارے میں بتایا۔

پانی پھر کھجور

سی این این سے بات کرتے ہوئے رہف البوشی نے بتایا کہ لوگوں کو رمضان میں افطاری کا آغاز تھوڑا سا پانی پی کر اور پھر کھجوریں کھا کر کرنا چاہیے، جو کہ شوگر کا ایک بڑا ذریعہ ہیں اور جلد توانائی بخشتی ہیں جس کی انہیں طویل روزے کے بعد ضرورت ہوتی ہے۔

کھجور میں کچھ ریشے ہوتے ہیں جو صحت کے لیے بہت فائدہ مند ہوتے ہیں۔ اس کے بلڈ شوگر میں تیزی سے اضافے کے امکانات کو کچھ میوہ جات کے ساتھ استعمال کر کے کم کیا جا سکتا ہے جو پروٹین سے بھرپور ہوتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ انسان کو کثرت سے کھجور نہیں کھانی چاہئے بلکہ ایک یا دو ہی کافی ہوتی ہیں۔

پانی
پانی

انہوں نے یہ بھی کہا کہ کھجور کھانے کے بعد لوگوں کو زیادہ مقدار میں کھانا اور جلدی نہیں کھانا چاہیے۔ آہستہ آہستہ کھانا چاہیے اور اپنے کھانے کو اچھی طرح چبا کر کھانا چاہیے۔

3 حصے

انہوں نے مزید کہا کہ جب آپ اپنا کھانا بناتے ہیں تو اپنی پلیٹ کو 3 حصوں میں تقسیم کریں: پہلا حصہ جو کہ پلیٹ کے آدھے حصے پر مشتمل ہو، اس میں نشاستہ دار سبزیاں یا سلاد ہونا چاہیے۔ دوسرا حصہ، جو پلیٹ کے ایک چوتھائی حصے کی نمائندگی کرتا ہے، اس میں فائبر سے بھرپور پیچیدہ کاربوہائیڈریٹ ہونے چاہیئیں، جیسے کہ آلو۔ آپ کی پلیٹ کے آخری تیسرے حصے کو پروٹین، یعنی چکن، گائے کا گوشت اور دیگر گوشت کے لیے مختص کیا جانا چاہیے۔

سالم اسٹیک
سالم اسٹیک

انہوں نے افطار ختم کرنے کے بعد کچھ پھل کھانے کی ضرورت پر بھی زور دیا۔

سحری

انہوں نے سحری کے کھانے میں پروٹین اور صحت بخش چکنائی کی زیادہ مقدار شامل کرنے کا مشورہ دیا۔انہوں سحری میں پروٹین اور صحت بخش چکنائی کے کھانے کی ضرورت پر زور دینے کی وجہ یہ بیان کی کہ یہ جسم میں دیر سے ہضم ہوتی ہیں اور بھوک کا احساس کم ہوتا ہے۔ انڈے، ایوکاڈو، دلیا اور دہی وغیرہ ، وہ غذائیں ہیں جو آپ کو دن بھر توانائی فراہم کریں گی۔

ایوکاڈو
ایوکاڈو

انہوں نے کہا کہ "رمضان میں کھانے سے مکمل پرہیز نہ کریں، لیکن کچھ غذائیں ایسی ہیں جن کا زیادہ استعمال نہیں کرنا چاہیے، جیسے میٹھے مشروبات اور تلی ہوئی چیزیں۔"

انہوں نے اس بات کو یقینی بنانے کی اہمیت پر زور دیا کہ روزہ نہ رکھنے کے اوقات میں جسم کو مناسب مقدار میں ہائیڈریٹ کیا جاتا رہے۔ کافی مقدار میں پانی پیئیں ، سوپ لیں اور ایسے پھل کھائیں جن میں پانی کی مقدار زیادہ ہو۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں