اس نے ہم میں سے ہر ایک کی عصمت دری کی: ابو بکر البغدادی کی قیدی خواتین کا انکشاف

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

شام اور عراق میں نام نہاد ’’ خلافت‘‘ قائم کرنے والے داعش کے سابق رہنما ابو بکر البغدادی کے حالات سے مزید آگاہی سامنے آئی ہے۔ البغدادی کی باندی بنائی گئی دو خواتین رھام اور رحی نے انکشاف کیا ہے کہ البغدادی نے ہم میں سے ہر ایک کی عصمت دری کی تھی۔

حال ہی میں العربیہ چینل البغدادی کی دو بیویوں اور بیٹی کے انٹرویوز پیش کئے۔ ان انٹرویوز میں مقتول داعش سربراہ کی زندگی کے حوالے سے کئی انکشافات کئے گئے۔ العربیہ چینل البغدادی کی باندی بنائی گئی خواتین کے مزید خصوصی انٹرویوز اگلے جمعہ کو نشر کر رہا ہے۔ اگلے انٹرویو میں دو لڑکیوں رھام اور رحی نے البغدادی کے اپنی مبینہ باندیوں سے تعلقات کے رازوں سے پردہ اٹھایا ہے۔

ان دونوں خواتین نے اس بات کی تصدیق کی کہ البغدادی تمام لڑکیوں کی عصمت دری کر رہا تھا۔ کوئی بھی خاتون عصمت دری کا نشانہ بنے بغیر داعش سربراہ کے گھر میں داخل نہیں ہوتی تھی۔ اس کے بعد اس لڑکی کو فروخت کردیا جاتا تھا۔

انہوں نے یہ بھی وضاحت کی کہ اس تنظیم نے نہ صرف عصمت دری کی بلکہ بہت کم عمر میں بچوں کو ان کی ماؤں سے الگ بھی کیا ہے۔

قید بنائی جانے والی ان دو خواتین کے انٹرویوکے بعد اس سے اگلے ہفتے العربیہ نیٹ ورک ان خواتین کے اہل خانہ کے ساتھ نیا انٹرویو بھی نشر کرے گا۔ تاکہ قید کے سفر کے دوران دونوں لڑکیوں کی قسمت کے بارے میں اہم تفصیلات اور دیگر اسیروں پر بیتنے والی کہانیوں سے بھی آگاہی مل سکے۔

واضح رہے داعش کے سربراہ ابو بکر البغداد نے 2014 میں عراق اور شام کے وسیع علاقوں پر کنٹرول قائم کرکے اپنی نام نہاد ’’ خلافت‘‘ کااعلان کردیا تھا اور ان علاقوں میں سخت قوانین نافذ کردئیے تھے۔ بعد میں البغدادی اکتوبر 2019 میں امریکہ کے ایک خصوصی آپریشن میں شام کی ادلب گورنری میں مارا گیا تھا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں