نیویارک میں ذہنی معذور افراد کو نوکری دینے والا فرانسیسی کیفے

ریاست ہائے متحدہ آف امریکہ میں 70 لاکھ افراد ذہنی اور علمی معذوری کا شکار اور ان کا 80 فیصد بے روزگار ہے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

نیویارک کے متحرک کاروباری علاقے کے مرکز میں کیفے جوئیوکس ایک فرانسیسی چین کی ایک شاخ ہے جس میں آٹزم یا ڈاؤن سنڈروم والے افراد کو ملازمت دی گئی ہے۔ یہ کیفے اس حوالے سے ایک سنگِ میل کی حیثیت رکھتا ہے کیونکہ ریاست ہائے متحدہ میں نوکریوں کا بازار ذہنی طور پر معذور لوگوں کے لیے تقریباً بند ہو چکا ہے۔

Joyeux Lexington Café مین ہٹن کے سب سے خوشحال راستوں میں سے ایک کے کونے پر واقع ہے۔ پر تعیش فلک بوس عمارتوں کے درمیان بینکوں اور کمپنیوں کے دفاتر ہیں۔ جنوری سے کیفے نے ایک ہم آہنگ اور روشن جگہ پر قبضہ کر لیا ہے۔ جمعرات کو اس کا افتتاح فرانسیسی کمپنی کے بانی یان بوکیلے لانریزاک نے ورلڈ ڈاؤن سنڈروم ڈے کے موقع پر کیا۔ یہ دن ہر سال 21 مارچ کو منایا جاتا ہے۔ 54 سالہ تاجر کا کہنا ہے کہ ہم یہاں بہت عاجزی کے ساتھ پہنچے ہیں۔

لانریزاک اور ان کی اہلیہ نے 2017 میں مغربی فرانس کے علاقے رینیز میں پہلا کیفے کھولا تھا۔ پھر فرانس میں اس چین کے 14 کیفے کھولے۔ سلسلہ کو آگے بڑھاتے ہوئے پرتگال میں چار اور بیلجیئم میں ایک برانچ کھولی۔ فرانسیسی صدر ایمانوئل میکرون نے 2020 میں پیرس کے علاقے ’’چیمپس۔ایلی سیز‘‘ میں اس کیفے کی ایک برانچ کا افتتاح کیا تھا۔

لیکن نیویارک میں صدر بائیڈن اور نا ہی میئر ایرک ایڈمز کو کیفے کی برانچ نمبر 21 کے افتتاح کے لیے مدعو کیا گیا۔ یہ امریکا میں اس چین کا پہلا کیفے ہے۔ سرکاری اعدادوشمار کے مطابق امریکہ میں سات ملین بالغ افراد ذہنی اور علمی معذوری کا شکار ہیں۔ ان میں سے تقریباً 80 فیصد لیبر مارکیٹ سے باہر ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں