ماہ صیام کے دوران دو مقدس مساجد میں "الیکٹرانک" بریل قرآن کی فراہمی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

حرمین شریفین کے امور کے ادارہ نے مسجد حرام اور مسجد نبوی صلی اللہ علیہ وسلم میں ماہ صیام کے دوران نابینا افراد کے مزید الیکٹرانک قرآنی نسخے فراہم کرنے، قرآن کریم کی تلاوت اور اس کی تفہیم کے لیے سہولیات فراہم کرنے اور عمرہ کے لیے آنے والے نابینا افراد کی ضروریات کو پورا کرنے کا اعلان کیا ہے۔ الیکٹرانک بریل قرآن پاک کی آیات کے مطابق فکسڈ حروف کو متحرک حروف میں تبدیل کرنے کی خصوصیت رکھتا ہے۔ یہ ایک ایسا ڈیزائن ہے جو نابینا افراد کو صفحات، سورتوں اور پاروں تک پہنچنے کی آسانی فراہم کرتا ہے۔

رمضان المبارک کے دوران ’’مسجد حرام اور مسجد نبوی کے امور کی صدارت عامہ‘‘ اپنی خدمات کے ذریعہ زائرین اور عازمین عمرہ کی خصوصی توجہ حاصل کرتا ہے۔ ادارہ کی جانب سے نابینا افراد کو الیکٹرانک قرآن سے قرآن پڑھنے اور اس کی تفسیر کرنے کے قابل بنانے کی سہولت فراہم کی جارہی ہے۔ یہ الیکٹرانک بریل قرآن انہیں کاغذی بریل قرآن سے تلاوت میں درپیش مشکلات سے بچائے گا۔ کاغذی قرآن بریل چھ بڑی جلدوں پر مشتمل ہوتا ہے اور اس میں تلاوت کرنے والے کو متعلقہ آیت اور پارہ تک پہنچنے میں قدرے مشکل کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔

دونوں مقدس مساجد کے الیکٹرانک قرآن کے لیے مخصوص مقامات اور الماریوں کے علاوہ نابینا افراد کے لیے بریل قرآن کی کتابیں مخصوص جگہوں پر رکھی گئی ہیں۔ قرآن پاک کے الفاظ کے معانی کے قرآنی تراجم بھی ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں