جمعۃ الوداع پر مسجد حرام اور مسجد نبوی میں لاکھوں افراد کی آمد، بہترین انتظامات

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

مسجد نبوی اور مسجد نبوی کے مذہبی امور کی صدارت عمومی نے کہا ہے کہ رمضان کے بابرکت مہینے کے چوتھے اور آخری جمعہ کے لیے نظام کا منصوبہ کامیابی سے ہمکنار ہوا ہے۔ ماہ صیام کے آخری عشرہ میں نمازیوں اور زائرین کو بہتر تجربہ فراہم کرنے اور عبادت کے لیے ساز گار ماحول فراہم کرنے کی منصوبہ بندی کی گئی تھی۔

مسجد نبوی اور مسجد نبوی کے امور کے ادارے کے سربراہ ڈاکٹر عبدالرحمٰن السدیس نے کہا رمضان کے آخری جمعہ کے لیے ’’ صدارت عمومی‘‘ کے منصوبے کی کامیابی پر اللہ کا شکر کرتے ہیں۔ خادم حرمین شریفین کی توجہ سے زائرین کی خدمت کے لیے ہر ممکن کوشش کی گئی۔

مسجد حرام میں  نماز جمعہ کا خطبہ دیا جارہا
مسجد حرام میں نماز جمعہ کا خطبہ دیا جارہا

بنائے گئے منصوبوں میں عبادت کو آسانی کے ساتھ انجام دینے کے خواہش مند افراد کو سہولیات فراہم کرنے کو شامل کیا گیا ہے۔ آخری جمعہ کے لیے عقیدت کا ماحول بنانا اور حرمین شریفین میں جانے والوں کے تجربے کو تقویت بخشنا بھی مقصد تھا۔ لوگوں کی بہتر سہولیات کی فراہمی کی یہ کامیابی شراکت داروں کے درمیان ہم آہنگی، پیمائش اور کارکردگی کے اشاریوں کو ایڈجسٹ کرنے کے نتیجے میں حاصل ہوئی۔

مسجد حرام اور مسجد نبوی میں لاکھوں نمازیوں اور زائرین کی آمد کا مشاہدہ کیا گیا۔ رمضان کے آخری جمعہ کی نماز ادا کی گئی۔ مذہبی خدمات کے مربوط نظام کے درمیان عبادات کو شرعی تقاضوں کے مطابق ادا کرنے کا ماحول فراہم کیا گیا تھا۔

مسجد نبوی میں جمعۃ الوداع پر نمازی
مسجد نبوی میں جمعۃ الوداع پر نمازی

اس حوالے سے مسجد نبوی کے امور کی انتظامیہ نے بتایا کہ رمضان المبارک 1445 ہجری کے بابرکت مہینے کے پہلے دو عشروں کے دوران مسجد نبوی میں 20 ملین سے زیادہ نمازیوں نے شرکت کی۔ روضہ مبارک کی زیارت کرنے اور سلام پیش کرنے والوں کی تعداد 16 ملین سے زیادہ رہی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں