اسرائیل پر ایرانی حملے میں زخمی ہونیوالی فلسطینی لڑکی کی حالت میں بہتری

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

ایران کی اسرائیل پر بمباری میں واحد زخمی ہونے والی فلسطینی بچی امینہ الحوسنی کی حالت میں معمولی بہتری آئی ہے۔ الحوسنی کو ایرانی میزائل کے ٹکڑے سر میں لگنے سے چوٹ آئی تھی۔ لڑکی کے والد محمد نے کہا کہ بچے گھر میں سونے سے ڈر رہے ہیں اگر ہمارے پاس ڈھال ہوتی تو ہم پرسکون ہوسکتے تھے۔

سوروکا ہسپتال نے ہفتہ کو بتایا کہ سات سالہ امینہ الحوسنی کی حالت میں معمولی بہتری آئی ہے۔ اب وہ خود سانس لے رہی ہے۔ تاہم اس کی حالت اب بھی خطرناک ہے۔ سوروکا ہسپتال کے مطابق امینہ کے سر کی چوٹ سنگین تھی۔ وہ اب بچوں کے انتہائی نگہداشت کے یونٹ میں ہے۔

امینہ کے والد محمد نے کہا اس کی حالت میں بہتری آئی ہے جس پر ہم خوش ہیں۔ اس واقعہ کے بعد بچے اب گھر میں نہیں سوتے بلکہ باہر راستوں میں سوتے ہیں اور اپنے گھروں کو لوٹنے سے ڈر رہے ہیں۔ اگر ہمارے پاس محفوظ رہنے کے لیے کوئی ڈھال ہوتی تو ہم پرسکون ہوسکتے تھے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں