گرمی کے سیزن میں 8 سبزیاں جن کے کھانے سے گریز کرنا چاہیے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

شدید گرمی کے موسم میں ماہرین اہم کھانوں کے اجزا کے انتخاب میں احتیاط برتنے کا مشورہ دیتے ہیں کیونکہ بعض غذائی اجزا سستی اور کاہلی کے احساس کا باعث بن سکتے ہیں یا موسم میں گرمی کے احساس کو بڑھا سکتے ہیں۔ سبزیاں صحت بخش ہوتی ہیں اور کسی بھی متوازن غذا میں اولین ترجیح ہوتی ہیں لیکن "ڈی این اے" انڈیا کی طرف سے شائع ہونے والے اعداد و شمار کے مطابق 8 قسم کی سبزیوں سے گرمی کے دنوں میں پرہیز کرنا چاہیے۔

پالک اور بند گوبھی

پالک اور بند گوبھی وٹامنز اور معدنیات کے بہترین ذرائع ہیں، لیکن ان میں پانی کی مقدار زیادہ نہیں ہوتی۔ اس لیے انہیں لیٹش یا ارگولا سے تبدیل کیا جا سکتا ہے۔


پھول گوبھی

بروکولی یا پھول گوبھی کھانے سےانسانی جسم کے اندر گرمی ہوتی ہے۔ اسی وجہ سے ماہرین گرمی سے لطف اندوز ہونے اور وٹامنز اور منرلز کی اعلیٰ مقدار سے فائدہ اٹھانے کے لیے سردیوں کے موسم میں انہیں کھانے کا مشورہ دیتے ہیں۔

جڑ والی سبزیاں

جڑ والی سبزیاں ایک قیمتی غذائیت ہیں وہ نشاستہ دار ہوتی ہیں زیادہ گھنے ہو سکتی ہیں۔ ان کے ہضم کرنے کے لیے زیادہ توانائی کی ضرورت ہوتی ہے۔ اس لیے گرمیوں میں اسے کھانا مناسب نہیں۔

پیٹھا کدو

جڑ والی سبزیوں کی طرح موسم سرما کے اسکواش کی کچھ اقسام زیادہ گھنے ہوتی ہیں اور ہضم ہونے میں زیادہ توانائی لیتی ہیں جس کے نتیجے میں گرمی زیادہ ہوتی ہے۔

مٹر

مٹر پروٹین اور فائبر کا ایک اچھا ذریعہ ہیں لیکن یہ کچھ لوگوں میں پیٹ پھولنے کا سبب بھی بن سکتے ہیں۔

مکئی

مکئی تکنیکی طور پر ایک اناج ہے لیکن اسے اکثر سبزی کی طرح کھایا جاتا ہے۔ مٹر کی طرح مکئی میں نشاستہ کی مقدار زیادہ ہوتی ہے جس سے پیٹ پھولنے کا اندیشہ ہوسکتا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں