"میں نے فوج میں خدمات انجام دیں" کا کارڈ پکڑ کر مس اسرائیل کا نیویارک میں گشت

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

اسرائیل کی حسینہ ’’ مس اسرائیل‘‘ نے نیویارک کی سڑکوں پر گشت کرتے ہوئے اس وقت ایک تنازع کھڑا کردیا جب انہوں نے ایک کارڈ اٹھا رکھا تھا جس پر لکھا تھا ’’میں اسرائیلی دفاعی افواج میں خدمات انجام دیتی ہوں، آپ مجھ سے کوئی بھی سوال پوچھ سکتے ہیں؟‘‘ تاہم اس صورت حال میں سخت رد عمل کا اظہار کیا گیا جس نے انہیں رونے پر مجبور کردیا۔

Advertisement

نوا کوشوا نام کی لڑکی نے اپنے انسٹاگرام اکاؤنٹ پر ایک ویڈیو کلپ پوسٹ کیا جب وہ مذکورہ عبارت والا کارڈ لے کر نیویارک کی گلیوں میں گھوم رہی تھی۔ ویڈیو میں دیکھا گیا کہ اسے سخت تنقید اور نفرت کا سامنا کرنا پڑا۔ کچھ راہگیروں نے اسے "جنگی مجرم" قرار دیا۔ غصے سے بھری ایک امریکی خاتون نے اس کی جانب چاقو تک اٹھا لیا اور کہا "تم صیہونی ہو"

نوجوان خاتون بھی جان بوجھ کر ان فلسطینی حامیوں کے درمیان گھومتی رہی جنہوں نے فلسطینی جھنڈے بھی اٹھا رکھے تھے۔ فلسطین کے حامی افراد میں سے ایک نے نوا کوشوا سے پوچھا ’’آپ رات کو کیسے سو لیتی ہیں؟‘‘ اس نے جواب دیا ’’میں اچھی طرح سوتی ہوں کیونکہ میں جانتی ہوں کہ میں درست سمت میں کھڑی ہوں"

نوا کوشوا نے ایک امریکی فوجی سے بھی بات کی اور اسے بتایا کہ اس کے ساتھ جو سب سے اچھی چیز پیش آئی وہ اسرائیلی فوج میں اس کی خدمات تھیں۔ اس نے اپنی ان خدمات پر فخر کا اظہار کیا۔ دیگر راہگیر افراد نے اس کے لیے اور اس کے ملک اسرائیل کے لیے محبت کا اظہار کیا۔

ویڈیو کلپ میں نواکوشوا کو نفرت کا سامنا کرنے پر روتے ہوئے بھی دیکھا گیا۔ اس نے اس صورت حال پر عدم اطمینان کا اظہار کیا اور کہا کہ وہ صرف پرامن مکالمہ کرنے کی کوشش کر رہی تھی۔ یہ تصادم ایسے وقت میں سامنے آیا ہے جب متعدد امریکی یونیورسٹیوں میں غزہ پر اسرائیلی جنگ کے خلاف مظاہروں میں شدت آرہی ہے۔ امریکی یونیورسٹیوں میں اسرائیل کے خلاف احتجاج کرنے پر گرفتار ہونے والے افراد کی تعداد 2600 ہوگئی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں