مالی تنازع، ترک شہری نے مخالف کو سڑک پر ہی ہتھوڑوں سے مارنا شروع کردیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

ترکیہ کے شہر توکات میں ایک خوفناک واقعہ پیش آیا۔ مرکزی شاہراہ پر راہگیروں کے سامنے ایک شہری نے دوسرے کو قتل کرنے کے لیے ہتھوڑوں سے تشدد کا نشانہ بنا ڈالا۔ ایک شہری کو دوسرے کو ہتھوڑوں سے مارنے کے واقعہ کو نگرانی کرنے والے کیمرے نے محفوظ کرلیا۔

اس حوالے سے حاصل ہونے والی فوٹیج میں دیکھا جا سکتاہے کہ ایک نوجوان دوسرے کو بے دردی سے ہتھوڑوں سے مار رہا ہے۔ راہ گیر بھی موجود ہیں لیکن حملہ آور نے انہیں یکسر مسترد کردیا اور دوسرے کو مارنا شروع کردیا۔ اس خوفناک اقدام سے ظاہر ہوگیا کہ حملہ دوسرے شخص کو قتل کرنے کا خواہش مند تھا۔

سڑک پر موجود دوسرے افراد نے متاثرہ شخص کو بچانے کی کوشش کی تو فوری طور پر اس میں ناکام ہوگئے اور سفاک حملہ آور نے وار جاری رکھے۔ اس تشدد کی ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہوگئی اور اس پر بڑی تعداد میں لوگوں نے تبصرے کئے۔

ایک ویڈیو کلپ میں دکھایا گیا ہے کہ ایک ترک شخص ایک دوسرے شخص پر حملہ کرتا ہے جو ٹوکاٹ شہر کی ایک مرکزی سڑک پر چل رہا تھا۔ حملہ آور نے اسے ہتھوڑے سے مارا۔ راہگیر اس کو بچانے کی کوشش کے باوجود شکار کو بچانے میں ناکام رہے۔

مقامی ترک میڈیا نے بتایا کہ متاثرہ شخص کی عمر 25 سال ہے اور اب وہ ہسپتال کے انتہائی نگہداشت وارڈ میں زیر علاج ہے۔ اس کی حالت تشویشناک ہے۔ یہ بھی بتایا گیا ہے کہ حملہ آور کی عمر بھی 25 سال تھی۔ حملے کی وجہ مالی تنازع تھا۔ متاثرہ شخص نے حملہ آور سے بطور قرض لی گئی رقم واپس کرنا تھی۔ ویڈیو کلپ میں حملہ آور کو متاثرہ شخص کے سر اور پھر اس کی ٹانگ کو نشانہ بناتے ہوئے دکھایا گیا ہے۔

میڈیا نے حملہ آور کا نام سامیت ایس ظاہر کیا ہے۔ متاثرہ شخص کا نام میرٹ ٹورن ہے۔ پولیس نے حملہ آور کو حراست میں لے کر تفتیش شروع کردی ہے۔ یاد رہے ترکیہ میں اس طرح کے واقعات مسلسل سامنے آ رہے ہیں۔ سوشل میڈیا صارفین حکام سے ایسے واقعات کی روک تھام کے لیے اقدامات کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں