دنیا بھر کے صدور جو المناک فضائی حادثات میں جان کی بازی ہار گئے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

اتوار 19 مئی کو ایرانی صدر ابراہیم رئیسی اور ان کے وزیر خارجہ حسین امیر عبداللہیان کا ہیلی کاپٹر حادثہ کا شکار ہوگیا۔ حادثہ میں ایرانی صدر اور دیگر 7 افراد جاں بحق ہوگئے۔ یہ ایسا پہلا فضائی حادثہ نہیں تھا جس میں کسی ملک کے صدر کی زندگی کا خاتمہ ہوا ہو۔ اس سے قبل کئی عالمی رہنما اور ملکوں کے سربراہان بھی اسی طرح کے حادثات میں دنیا سے رخصت ہو چکے ہیں۔

ایرانی صدر ابراہیم رئیسی کی اس المناک موت سے چند ماہ قبل ہی 6 فروری 2024 کو چلی کے سابق صدر سباسٹین پنیرا ایک جھیل میں ہیلی کاپٹر گرنے کے نتیجے میں ہلاک ہوگئے تھے۔ انہوں نے 2010 میں چار سال کی مدت کے لیے صدارت سنبھالی ۔ پھر واپس آکر مشیل بیچلیٹ کی جگہ 2018 سے 2022 تک یہی عہدہ سنبھالا تھا۔ وہ سینٹیاگو سے تقریباً 920 کلومیٹر جنوب میں واقع سیاحتی مقام لاگو رینچو میں حادثہ کا شکار ہوئے تھے۔

فضائی حادثات میں مرنیوالے  ملکوں کے سربراہان
فضائی حادثات میں مرنیوالے ملکوں کے سربراہان

10 اپریل 2010 کو پولینڈ کے صدر لیخ کازنسکی اور دیگر 95 افراد اس وقت ہلاک ہوگئے تھے جب ان کا طیارہ روسی قصبے سولنسک کے ایئرپورٹ کے قریب گر کر تباہ ہوگیا تھا۔ اس طیارے میں پولش سیاسی اور فوجی حکام بھی سوار تھے۔ ایئرپورٹ پر اترنے کی کوشش کے دوران طیارہ تباہ ہوگیا اور سوار تمام افراد لقمہ اجل بن گئے۔ حادثہ خراب موسم کی وجہ سے پیش آیا۔ تاہم حادثہ کی وجوہات میں پولش پائلٹوں اور روسی ایئر ٹریفک کنٹرولرز کی غلطیاں بھی شامل تھیں۔

30 جولائی 2005 کو جنوبی سوڈان کے نائب صدر اور سابق باغی رہنما جان گارانگ ایک ہیلی کاپٹر کے حادثے میں ہلاک ہو گئے۔ وہ ہیلی کاپٹر انہیں یوگنڈا سے لے جا رہا تھا۔

10 اپریل 2010 کو پولینڈ کے صدر لیخ کازنسکی  حادثہ کا شکار ہوئے
10 اپریل 2010 کو پولینڈ کے صدر لیخ کازنسکی حادثہ کا شکار ہوئے

مقدونیہ کے صدر بورس ٹراجکووسکی بھی 26 فروری 2004 کو جنوبی بوسنیا میں آٹھ افراد کے ساتھ اس وقت ہلاک ہوگئے جب انکا طیارہ موسٹار میں اترنے کی تیاری کر رہا تھا کہ گر کر تباہ ہوگیا۔

علاوہ ازیں 6 اپریل 1994 کو ایک فالکن 50 طیارہ کو روانڈا کے دار الحکومت کیگالی میں ایک میزائل سے مار گرایا گیا۔ اس حادثہ میں روانڈا کے صدر جووینال ہبیاریمانا اور ان کے برونڈی ہم منصب سائپرین نتاریامیرا ہلاک ہوگئے تھے۔ تب اس حملے کو روانڈا میں توتسی اقلیت کے خلاف نسل کشی کے پیچھے محرک سمجھا جاتا تھا۔ اقوام متحدہ کے مطابق اس نسل کشی کے دوران 8 لاکھ سے زیادہ افراد ہلاک کئے گئے۔

سوڈان کے نائب صدر جون قرنق
سوڈان کے نائب صدر جون قرنق

پاکستان کے صدر ضیاء الحق 17 اگست 1988 کو ملک کے شہر بہاولپور کے قریب ایک طیارے کے حادثے کے نتیجے میں انتقال کر گئے۔

19 اکتوبر 1986 کو موزمبیق کے پہلے صدر سامورا مشیل شمال مشرقی جنوبی افریقہ میں طیارہ حادثہ میں 24 افراد کے ساتھ ہلاک ہوگئے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں