سات اکتوبر کو اسرائیلی فوجی کمانڈر کو بھی یرغمال بنایا، وقت ختم ہو رہا: حماس

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

حماس کے عسکری ونگ القسام بریگیڈز نے اعلان کیا ہے کہ اس نے اسرائیلی فوج کے غزہ ڈویژن کے جنوبی بریگیڈ کے کمانڈر اساف حمامی کو 7 اکتوبر کو شہروں اور قصبوں پر حملے کے الزام میں حراست میں لے لیا ہے۔ اگرچہ القسام نے اپنے ٹیلی گرام اکاؤنٹ پر پوسٹ کی گئی ویڈیو ٹیپ میں یہ واضح نہیں کیا کہ آیا فوجی کمانڈر زندہ ہے، لیکن اس نے ٹیپ کا اختتام اس جملے کے ساتھ کیا کہ "وقت ختم ہو رہا ہے۔"

فروری میں اسرائیل نے کہا تھا کہ غزہ ڈویژن کے جنوبی بریگیڈ کا کمانڈر حماس کی طرف سے سات اکتوبر کو کیے گئے اچانک حملے میں مارا گیا تھا۔ فوج نے ایک بیان میں کہا تھا کہ اساف حمامی سات اکتوبر کی لڑائی میں مارا گیا اور حماس نے اس کی لاش اپنے قبضے میں لے لی ہے۔

اسرائیلی فوج نے کہا ہے کہ اس نے جبالیا میں ایک کارروائی میں القسام سے وابستہ بیت حانون بٹالین کے کمانڈر حسین فیاض کو ہلاک کر دیا۔ غزہ میں وزارت داخلہ نے آج اعلان کیا کہ پٹی میں قومی سلامتی دستوں کے اسسٹنٹ کمانڈرضیاء الدین الشرفا اور چار دیگر اہلکار غزہ شہر کے مرکز میں اسرائیلی فضائی حملے میں مارے گئے ہیں۔

غزہ میں وزارت صحت نے کہا ہے کہ غزہ کی پٹی پر 230 دنوں کی جارحیت میں اسرائیلی فوجی بمباری، گولہ باری اور دیگر وحشیانہ کارروائیاں کرکے 35800 فلسطینیوں کو شہید اور 80011 کو زخمی کرچکے ہیں۔ بیان میں یہ بھی کہا گیا کہ متعدد متاثرین اب بھی ملبے کے نیچے اور سڑکوں پر ہیں اور ایمبولینس اور شہری دفاع کا عملہ ان تک نہیں پہنچ سکتا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں