یمن، سوڈان، شام کے لیے سعودی عرب کی 19 ملین ڈالر امداد

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

سعودی عرب کے کنگ سلمان ہیومینیٹرین ایڈ اینڈ ریلیف سنٹر نے سوڈان، یمن اور شام کی مدد کے لیے ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن کے ساتھ 19 ملین 496 ہزار ڈالر مالیت کے 5 مشترکہ انتظامی پروگراموں پردستخط کئے ہیں۔ جنیوا میں عالمی ادارہ صحت کی جنرل اسمبلی کے 77ویں اجلاس کے موقع پر پانچ معاہدوں پر رائل کورٹ کے مشیر اور سنٹر کے جنرل سپروائزر ڈاکٹر عبداللہ الربیعہ اور ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن کے ڈائریکٹر جنرل ڈاکٹر ٹیڈروس اذانوم گریبیسس نے دستخط کئے۔

پہلے معاہدے میں سوڈان میں ڈائیلاسز کے سامان کی شدید کمی کو پورا کرنے کے لیے مختلف سوڈانی ریاستوں میں گردے فیل ہونے والے مریضوں کی اموات کو کم کرنے کے لیے تقریباً 235,000 ڈائیلاسز سامان فراہم کیا جائے گا۔ 100 ڈائیلاسز مشینیں فراہم کی جائیں۔ ڈائلیسس کے لیے 77 مراکز میں طبی عملہ کی تنخواہوں کے لیے 5 ملین ڈالر فراہم کئے جائیں گے۔

دوسرے معاہدے کے تحت جمہوریہ شام میں زلزلے سے متاثر ہونے والوں افراد کو طبی امداد فراہم کی جائے گی۔ منصوبے کی لاگت 4 ملین 746 ہزار امریکی ڈالر ہے۔ اس منصوبے میں شمال مغربی شام میں 17 مرکزی ہسپتالوں کو صحت کی سہولیات فراہم کی جائیں گی۔ 10 ایمبولینسز اور ادویات کی بڑی مقدار کی فراہمی بھی منصوبے کا حصہ ہے۔

تیسرا معاہدہ یمن میں پانچ سال سے کم عمر کے بچوں میں خسرہ کے پھیلاؤ کا مقابلہ کرنے کے لیے کیا گیا ہے۔ مجموعی طور پر 3 ملین امریکی ڈالر کی لاگت سے 1205336 یمنی بچوں کو حفاظتی انجیکشن لگانے کا بندوبست کیا جائے گا۔ 1125 مراکز صحت پر انجیکشن کی سہولت فراہم کی جائے گی۔

چوتھے معاہدے کے تحت یمن میں صحت کی دیکھ بھال کی سہولیات میں پانی اور صفائی کی خدمات کو بہتر بنانے کی شرط رکھی گئی ہے تاکہ یمن میں سب سے زیادہ ضرورت مند آبادی کی خدمت کی جاسکے۔ اس منصوبے کی مالیت 3 ملین 750 ہزار امریکی ڈالر ہے۔ اس منصوبے کے تحت شمسی توانائی سے چلنے والے 10 کنویں کھدائے جائیں گے۔ پینے کے قابل پانی کی فراہمی اور 60 صحت کی دیکھ بھال کی سہولیات میں پانی کے معیار اور علاج کی نگرانی کی جائے گی۔

پانچواں اور آخری معاہدہ یمن بھر میں ہیضے کے پھیلاؤ کو محدود کرنے کے لیے کیا گیا۔ اس منصوبے کی مالیت 3 ملین امریکی ڈالر ہے۔ مرکزی لیبارٹریوں کے لیے ویکسین، ادویات اور طبی استعمال کی اشیا کو محفوظ کرنے کے اقدامات کئے جائیں گے۔ ذاتی حفاظتی سامان فراہم کیا جائے گا۔ طبی عملے میں وبائی امراض کی تحقیقاتی سرگرمیوں کے علاوہ ویکسینیشن مہموں کے لیے آپریشنل بجٹ کے لیے رقم ادا کی جائے گی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں