صحت کی بہتری کے لیے روزانہ کتنے انڈے کھانے کی اجازت ہے؟

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

ایک صحت مند اور فائدہ مند کھانے کو بہت سے لوگ پسند کرتے ہیں۔ کھانے کے شوقین افراد کی طرف سے ایک سوال یہ سامنے آتا ہے کہ ایک دن میں کتنے انڈے کھانے کی اجازت دی جا سکتی ہے تاکہ یہ خوراک صحت عامہ کو نقصان پہچانے والے خطرے میں تبدیل نہ ہو جائے۔

معاملات کو واضح کرنے کے لیے روسی میڈیکل بائیوٹیکنالوجی انسٹی ٹیوٹ کے ڈائریکٹر ڈاکٹر الیگزینڈر الیکسیو نے انکشاف کیا ہے کہ انڈوں کے استعمال میں عالمی سطح پر اضافہ ہو رہا ہے کیونکہ یہ ایک غذائیت سے بھرپور اور فائدہ مند خوراک ہے۔ انہوں نے واضح کیا کہ انڈے واقعی صحت مند مصنوعات ہیں کیونکہ انڈوں میں کیلشیم، فاسفورس، لیسیتھین اور کیلسیفیرول کے علاوہ کافی حد تک آسانی سے ہضم ہونے والا پروٹین بھی موجود ہوتا ہے۔

انڈے کی زردی اومیگا 3، فولک ایسڈ، وٹامن اے، کے، ای، بی 12، سیلینیم اور بایوٹین کا ایک اہم ذریعہ ہے۔ مرغی کے انڈوں کا باقاعدگی سے استعمال پٹھوں کے حجم کو بڑھانے، ہڈیوں کو مضبوط بنانے، دماغی افعال اور بافتوں کو برقرار رکھنے میں مدد کرتا ہے۔ انڈے بلڈ پریشر کو کم کرنے اور اضافی وزن کا مقابلہ کرنے میں بھی معاون ہیں۔

روسی ڈاکٹر نے بتایا کہ انڈوں کی مقدار کے بارے میں کوئی متفقہ معیار موجود نہیں ہے کہ یہ تعداد روزانہ، ہفتے یا مہینے میں کھائی جا سکتی ہے۔ تاہم روس میں، مثال کے طور پر، وزارت صحت کا مشورہ ہے کہ ایک بالغ شخص ہر سال 260 انڈے کھائے۔ اس کا مطلب ہے کہ روزانہ ایک سے زیادہ انڈے نہیں کھانے چاہیں۔

کچھ افراد کے لیے انتباہ

لیکن الیکسیو نے بعض گروہوں کو روزانہ انڈے کھانے کے خلاف خبردار کرتے ہوئے کہا کہ وہ لوگ جو خون میں کولیسٹرول کی بلند سطح کا شکار ہیں انہیں چاہیے کہ وہ اپنے انڈے کی زردی کا استعمال کم کرکے ہفتے میں دو سے تین مرتبہ تک لے آئیں۔ جو لوگ جگر، پتے، گردے اور پیشاب کی نالی کے امراض میں مبتلا ہیں، اسی طرح بوڑھے افراد کو انڈے کا استعمال کم کرنا چاہیے۔

انہوں نے انڈوں کے علاج اور صفائی کی ضرورت کی نشاندہی بھی کی کیونکہ انڈوں کے چھلکے سالمونیلا بیکٹیریا اور انفلوئنزا وائرس سے آلودہ ہو سکتے ہیں۔جو برڈ فلو کا باعث بنتے ہیں۔ اس لیے وہ انڈے جن کے خول آلودہ یا خراب ہوں ان کی خریداری کی سفارش نہیں کی جاتی۔ الیکسیو نے انڈوں کو گرم پانی اور صابن سے اچھی طرح دھونے کے علاوہ ان کی میعاد ختم ہونے کی تاریخ پر توجہ دینے کی ضرورت پر بھی زور دیا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں