.

بہترین حج انتظامات پر سعودی حکومت کے شکر گذار ہیں: پیر نور الحق قادری

’’حج آپریشن بخیر وعافیت مکمل ہونے پر تمام حجاج اکرام کو مبارک باد پیش کرتا ہوں‘‘

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

’’حج آپریشن بخیر وعافیت مکمل ہونے پر تمام حجاج اکرام کو مبارک باد پیش کرتا ہوں۔ بہترین انتظامات پر خادم حرمین شریفین، پرنس محمد بن سلمان، سعودی وزارت داخلہ، سعودی وزارتِ حج و عمرہ اور گورنر مکہ کے شکر گذار ہیں۔‘‘ یہ بات وفاقی وزیر مذہبی امور پیر نور الحق قادری نے ایام حج کے اختتامی دن کے موقع پر اپنے ایک پیغام میں کہی۔

تفصیلات کے مطابق وزیر مذہبی امور نے منیٰ میں قائم پاکستان حج مشن کے کیمپ کا دورہ کیا اور انتظامات کا جائزہ لیا۔ ان کا کہنا تھا کہ اس سال اللہ کے فضل و کرم سے حج آپریشن بڑی خوش اسلوبی سے جاری ہے۔ کسی ناخوشگوار واقع کی اطلاع نہیں ملی۔ پاکستانی حجاج مکہ اور مدینہ منورہ میں رہائش، خوراک اور سفری و طبی سہولیات سے نہایت خوش ہیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ اس سال منی و عرفات میں سہولیات کیلئے 47 مکاتب کا انتخاب کیا گیا تھا۔ 2 مکاتب کے کچھ حجاج کی شکایات ملنے پر عملہ کی جانب سے فوری ازالہ کیا گیا اور موسسہ جنوبی ایشیا کو مکاتب کے خلاف تادیبی کارروائی کیلئے کہہ دیا ہے۔ کچھ سیاسی عناصر نے ان دو مکاتب کے مسائل کو بڑھا چڑھا کر پیش کیا جو کہ حقیقت کے منافی ہے۔

پیر نور الحق قادری نے بتایا کہ اس سال پاکستان سے آنے والے 72 بیمار عازمین حج کو ایمبولینس پر حج اور طواف زیارت کی سہولیات مہیا کی گئیں جو کہ پیدل حج کرنے کے قابل نہیں تھے۔ آج 12 ذی الحجہ کو زیادہ تر پاکستانی حجاج منیٰ سے اپنی رہائشوں میں واپس پہنچ جائیں گے۔

وفاقی وزیر نے میڈیا کو بتایا کہ حج کے بعد حجاج کرام کی وطن واپسی کیلئے فلائٹ آپریشن کا آغاز 17 اگست سے براستہ جدہ شروع ہو گا۔ زیارتِ مدینہ کیلئے حجاج کرام کی بسیں 16 اگست سے مدینہ منورہ روانہ کی جائیں گی۔ حجاج کرام مکہ مکرمہ چھوڑنے سے پہلے طواف وداع بھی کریں گے۔ پاکستانی حجاج کی وطن واپسی کیلئے حج فلائٹ آپریشن 15 ستمبر تک جاری رہے گا۔