.

حجاج کرام کی پانچ زبانوں میں رہ نمائی کرنے والے رضاکار سے ملیے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب میں حجاج کرام کی خدمت کے ایمانی جذبے سے سرشار کارکنوں میں ایک عبدالحمید خیاط بھی ہیں جو بہت سے پہلوئوں سے ایک منفرد شخصیت کے حامل ہیں۔

سعودی عرب میں حجاج کرام کی رضاکارانہ خدمت کے لیے کام کرنے والے سعودی اسکاؤٹس سے وابستہ خیاط محکمہ تعلیم میں خدمات سرانجام دیتے رہے ہیں اور وہ ربع صدی سے مکہ معظمہ میں العزیزیہ امدادی کیمپ حجاج کرام کی تواتر کے ساتھ خدمت کرتے چلے آ رہے ہیں۔ ان کا کہنا ہے کہ زندگی کے آخری سانس تک حجاج کرام کی خدمت ہمارا مشن ہے اور ہم اس مشن کو جاری رکھیں گے۔

عبدالحمید خیاط کا کہنا ہے کہ مجھے ایسی عمر نہیں چاہیے جس میں حجاج کرام کی خدمت نہ ہو۔ اللہ کے مہمانوں کی اسی خدمت کے جذبے نے خیاط کو غیر ملکی زبانیں سیکھنے کی ترغیب دلائی۔ ڈھلتی عمر کے باوجود وہ اس وقت پانچ زبانیں سیکھنے کے بعد حجاج کرام میں ان کی زبانوں میں بات کرتے ہیں۔ عربی زبان تو ان کی مادری زبان ہے مگر اس کے علاوہ اس نے اردو، انڈونیشی اور انگریزی زبان بھی سیکھ لی ہے۔ اب وہ فارسی سیکھ رہے ہیں۔

ایک سوال کے جواب میں خیاط نے کہا کہ حجاج کرام کی خدمت تنظیم کے کارکنوں کے درمیان تعاون، احساس ذمہ داری کا شعور اور امانت اور صداقت کے ساتھ اپنی ذمہ داریاں پوری کرنے کا جذبہ صادق مہیا کرتی ہے۔ حجاج کرام کی خدمت ہمارے آبائو اجداد کی طرف سے ہمیں ورثے میں ملی ہے اور ہم اپنے عظیم ورثے پر فخر کرتے ہیں۔