.

سعودی نائب وزیر حج وعمرہ کا مقامات مقدسہ مزدلفہ، منی اور میدان عرفات کا دورہ

عازمین کو فراہم کردہ سہولتوں کا جائزہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کے نائب وزیر حج وعمرہ ڈاکٹر عبدالفتاح مشاط نے حج تیاریوں کا جائزہ لینے کے لیے مشاعر مقدسہ( منی، عرفات اور مزدلفہ) کا دورہ کیا۔ سعودی عرب میں مقدس مساجد کی انتظامیہ نے اس سال حج سیزن کی تیاریاں مکمل کرلی ہے۔

مملکت کی سرکاری خبر رساں ایجنسی ’’ایس پی اے‘‘ کے مطابق وزارت حج وعمرہ زائرین کو مناسک حج کی ادائیگی آسان اور محفوظ بنانے کے لیے بہترین انتظامات کے لیے کوشاں ہے اور اس حوالے سے پیش آنے والی تمام رکاوٹیں دور کرنے کے لیے اقدامات کر رہی ہے۔‘

حج وعمرہ قومی کمیٹی کے رکن ھانی العمیری نے بتایا کہ ’وزارت نے اس سال منی میں حاجیوں کو ٹھہرانے کے لیے چھ ٹاورز اور 70 کیمپوں کا انتظام کیا ہے۔‘ منیٰ ٹاورز میں منفرد پیکیج کے لیے 4.37 مربع میٹر کا رقبہ مختص کیا گیا ہے جبکہ اکانومی پیکیج میں چار میٹرکی جگہ دی جائے گی۔

علاوہ ازیں عازمین حج کے طعام کے لیے الگ سے مقام مقرر ہو گا۔ العمیری نے بتایا کہ منیٰ کے خیموں میں سپیشل پیکیج میں ایک فرد کو 5.33 مربع میٹر کی جگہ دی جائے گی۔ اس میں وہ جگہ شامل نہیں ہوگی جو گذشتہ برسوں کے دوران حاجیوں کی خدمات کے لیے مختص کی جاتی رہی ہے۔

دوسری جانب مقدس مساجد کی انتظامیہ نے بیان میں کہا ہے کہ اس سال حج موسم کی تیاریاں مکمل کرلی گئی ۔ انتہائی کوشش ہوگی کہ ہر حاجی کو صحت مند ماحول مہیا ہو اور اس سلسلے میں انہیں کسی دشواری کا سامنا نہ کرنا پڑے۔

مقدس مساجد [حرمین شریفین] کی انتظامیہ نے بیان میں مزید کہا کہ اس سال حج پلان سہ نکاتی ہے جو تکنیکی سہولتوں، وبا سے بچاؤ کے انتظامات اور مقررہ خدمات پر مشتمل ہے۔