.
حج وعمرہ

حج مقامات پربلا اجازت جانے کی کوشش پر10ہزارسعودی ریال جرمانہ ہوگا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی وزارت داخلہ نے کہا ہے کہ’المسجدالحرام، اطراف کے مقامات اور مشاعرمقدسہ (منیٰ ، مزدلفہ اور عرفات) میںاجازت نامے کے بغیر جانے کی کوشش پر جرمانہ ہو گا‘۔

سعودی عرب کی سرکاری خبر رساں ایجنسی ’ایس پی اے‘کے مطابق وزارت داخلہ کے ایک عہدہ دار نے بتایا ہے کہ ایام حج میں المسجدالحرام،اس کےآس پاس کے مقامات اور مشاعرمقدسہ (منیٰ، مزدلفہ اورعرفات) میں جانے کے لیے مجاز حکام کا جاری کردہ اجازت نامہ ضروری ہوگا‘۔

وزارت داخلہ کے ترجمان نے بتایا کہ’ 5 جولائی 2021 ( 25 ذی قعدہ 1442ھ) سے 23 جولائی ( 13 ذی الحجہ 1442ھ) تک یہ پابندی نافذالعمل ہوگی۔اس کی خلاف ورزی کے مرتکبین پر دس ہزار ریال جرمانہ عاید کیا جائے گا۔

وزارت داخلہ کے ترجمان نے تمام سعودی شہریوں اور مقیم غیرملکیوں کو ہدایت کی ہے کہ وہ حج موسم سے متعلق سرکاری ہدایات کی پاسداری کریں‘۔

ان پابندیوں پرعمل درآمد کو یقینی بنانے کے لیے سیکیورٹی اہلکار مسجد الحرام، منیٰ، مزدلفہ اورعرفات جانے والے تمام راستوں اورگذرگاہوں پر کڑی نظر رکھیں گے۔اجازت نامے کے بغیران مقامات کی جانب جانے والے افراد کو روکا جائے گا‘۔

یاد رہے کہ وزارت حج وعمرہ نے گذشتہ مہینے حج پروگرام کا اعلان کرتے ہوئے کہا تھا کہ اس سال صرف سعودی شہریوں اور مملکت میں مقیم غیرملکیوں ہی کو حج کی اجازت ہوگی۔

امیدواروں سے آن لائن درخواستیں طلب کی گئی تھیں- یہ بھی بتا دیا گیا تھا کہ اس سال صرف 60 ہزار افراد کو حج کے لیے اجازت نامے جاری کیے جائیں گے۔

وزارت حج وعمرہ نے یہ بات واضح کردی تھی کہ حج اجازت نامے صرف ایسے سعودیوں اور مقیم غیرملکیوں کو جاری ہوں گے جو پیچیدہ امراض سے پاک ہوں گے اور ان کی عمر 18 سے 65 برس کے درمیان ہوگی۔ اس کے علاوہ انھوں نے کرونا وائرس سے بچاؤ کے لیے ویکسین بھی لگوا رکھی ہو یا وہ کووِڈ-19 کاشکار ہونے کے بعد تن درست ہوچکے ہوں۔