.

حجاج کرام کے پہلے گروپ نے طواف قدوم کیسے مکمل کیا؟

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

ححاج کرام کے پہلے گروپ نے آج ہفتے کے روز طواف قدوم کا مرحلہ انتہائی آسانی اور سہولت کے ساتھ مکمل کیا۔

اس موقعے پرصحت کے حوالے سے ایس او پیز سختی کے ساتھ عمل درآمد کرایا گیا۔ حجاج کرام کے درمیان سماجی فاصلہ رکھا گیا۔ چہروں کو ماسک سے ڈھانپے کی سخت ہدایت کی گئی تھی۔

طواف قدوم کا آغاز صبح نو بجے ہوا۔ اس موقعے پر وزارت حج وعمرہ نے حج کے لیے ایگزیکٹو پلان کا اعلان کیا تھا۔ اس موقعے پرتمام سرکاری اداروں کے اشتراک سے شروع کردہ ایگزیکٹو پلان کے مطابق حجاج کرام کی آمد ورفت شروع کی گئی ہے اور صحت کے حوالے سے سخت انتظامات کیے گئے ہیں۔

ہفتے کی صبح کو 1770 بسوں کے ذریعے عازمین حج کو چار مراکز النواریہ، الزایدی، الشرائع اور الھدا سے حرم مکی تک پہنچایا گیا۔ ایک مرحلے میں چھ ہزار عازمین حج کو ان کی قیام گاہوں تک پہنچایا گیا۔ ہربس میں 20 عازمین حج سوار تھے جنہیں ایک گائیڈ کی بھی معاونت حاصل تھی۔

دوسری طرف طواف قدوم کے مناسک ادا کرنے والے حجاج کرام کے سامان کے بیگ بسوں کے ذریعے ان کی قیام گاہوں تک پہنچائے گئے۔