سعودی عرب میں حجاج کی نقل وحرکت کے روح پرور مناظر کی پانچ سو فٹ کی اونچائی سے عکس بند

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعوی پریس ایجسی کی فضائی منظر کو فلمبند کرنے کی ذمہ دار ایک رپورٹنگ ٹیم نے حجاج کرام کی مدینۃ المنورہ سے مکتہ معظمہ روانگی کی لمحہ بہ لمحہ کوریج کی ہے۔ ایس پی اے کی اس ٹیم کے ذمہ حجاج کے قافلے کی روانگی کے مناظر کو فضا سے کور کرنے کی ذمہ داری سونپی گئی تھی۔

حجاج کے اس قافلے میں 45000 سے زائد حجاج شامل تھے جس کے تک پہنچنے کے روح پرور مناظر کو فلم بند کیا گیا ہے۔ یہ حجاج کا آخری قافلہ تھا جو روضہ رسول کی زیارت کے بعد خانہ خدا کے لیے چار جولائی کو روانہ ہوا ۔اس مقصد کے لیے ایس پی اے کی فضائی رپورٹنگ ٹیم نے سٹٹ آف دی آرٹ کیمروں کی مدد سے پانچ سو فٹ کی بلندی سے فلم بندی کی استعمال کیے۔

مدینہ کے گورنر شہزادہ فیصل بن سلمان دبن عبدالعزیز نے خود اس قافلے کی روانگی کے معاملات کو دیکھا ۔ گورنر مدینہ شہزادہ فیصل بن سلمان اس ریجن میں حجاج اور دیگر وزٹس سے متعلق کمیٹی کے بھی سربراہ ہیں۔ حجاج کے اس قافلے نے اس سے پہلے نبی صلی اللہ علیہ وسلم اور آپ کے ساتھیوں کو مدنیہ میں سلام پیش کیا اور پہلا مرحلہ مکمل کرنے کے بعد مکہ روانہ ہوا۔

وزارت حج کے انڈر سیکرٹری محمد البیجاوی رپورٹنگ ٹیم نے قافلہ حجاج کی ذوالخلیفہ سے مکہ کے مضافات تک کوریج کی ۔ ان کے ذمہ اس قافلے کی مدینہ سے روانگی کے علاوہ رہائش کے انتطامات کرنا ، گم ہوجانے والے حجاج کی رہنمائی کرنا۔ اور بیمار ہوجانے کی صورت میں حجاج کی صحت سے متعلق ضروریات کا خیال رکھنا شامل ہے۔ اسی طرح اگر کوئی حاجی اس دروان انتقال کر جائے تو اس کی میت کے لیے تمام انتطامات بھی انہیں کی وزارت کے ذمہ ہیں۔

ایس پی اے کی فضائی رپورٹنگ ٹیم نے مدینہ منورہ سے حجاج کے اس روانہ ہونےوالے قافلے کی فضا ئی کوریج کرنے ے علاوہ حجاج کے لیے حکومت و دیگر غیر حکومتی اداروں کی طرف سے کیے گئے انتظامات کو بھی کمیرے کی آنکھ سے دیکھا اور ان کی توثیق کی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں