ڈاکیے سے ٹیکنالوجی تک حجاج کرام کے رابطوں کے سفر میں کیا انقلابی تبدیلی آئی؟

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

دُنیا کی مختلف زبانوں سے تعلق رکھنے والے عازمین حج سفر حج کے دوران اپنے جذبات اور مکہ المکرمہ میں قیام کے دوران روحانی و ایمانی مناظر کو آڈیو اور ویڈیو کے ذریعے مختلف سوشل میڈیا کے ذریعے نشر کرتے ہیں۔ مگر یہ سب کچھ آج کے جدید ٹیکنالوجی کے دور کی بدولت ہے مگر کسی زمانے میں عازمین حج کے رابطوں کا سہارا صرف ڈاک ہوتی تھی۔

ایک حاجی مکہ المکرمہ میں اپنی آمد کے لمحے کو دستاویزی شکل دے رہا ہے اور ایک اور حاجی اپنے اہل خانہ سے حج کی مناسک ادا کرنے کے لیے اپنی آمد پر اپنی بے حد خوشی کا اظہار کر رہا ہے، جب کہ تیسرا حجاج کرام کے لیے براہ راست مناظر کو پوری دنیا کے لیے نشر کرتا ہے۔

"العربیہ ڈاٹ نیٹ" کی کیمرہ ٹیم نے متعدد عازمین حج کی تصاویر اور ویڈیوز کی نشاندہی جو کہ سفر حج کو ریکارڈ کرنے کے ساتھ اُنہیں مختلف سماجی رابطوں کی سائٹس پر نشر کرنے یا اپنے اہل خانہ اور دوستوں تک پہنچانے کے لیے مصروف ہیں۔

آج ہوا کے دوش پرلمحوں کے اندر مناظر اور آواز کو دنیا کے کسی بھی کونے تک پہنچا دیا جاتا ہے۔ آج کے حجاج کرام کو اپنےپیاروں سے رابطوں کے حوالے سے کوئی پریشانی نہیں۔ ایک وقت تھا کہ عازمین حج گھر سے نکلتے تو ان کے ساتھ رابطوں کا کوئی ذریعہ نہیں ہوتا تھا۔ زیادہ سے زیادہ بعض عازمین حج کبوتروں یا دوسرےجانوروں کا استعمال کرتے ہوئے بذریعہ ڈاک اپنے اہل خانہ سے رابطہ کرسکتے تھے۔ مگر ٹیکنالوجی نے اب یہ فاصلے مٹا دیے ہیں۔

ڈاک حجاج کرام کے لیے مکہ سے دُنیا کے مختلف حصوں میں اپنے اہل خانہ اور دوستوں تک اپنی خبریں پہنچانے کا پرانا طریقہ تھا۔ ذرائع بدل گئے ہیں اور ہمارے دور میں بہت سےنئے طریقے ہیں۔ اسمارٹ ڈیوائسز اور جدید ٹیکنالوجی کے ساتھ ایک بٹن اور سیکنڈوں میں حجاج اسنیپ چیٹ اور ٹویٹر واٹس ایپ اور دیگر جدید ایپلی کیشنز کے ذریعے اپنے اہل خانہ کے ساتھ لمحات گزارتے ہیں۔

سعودی عرب میں کمیونیکیشن اینڈ انفارمیشن ٹیکنالوجی کمیشن نے مکہ مکرمہ اور مدینہ منورہ اور مقدس مقامات کے شہروں میں 5,900 سے زیادہ کمیونیکیشن ٹاورز مختص کیے ہیں۔ اس کے علاوہ 5G کے ٹاورز کی تعداد میں 41 فیصد اضافہ کرکے 2,600 سے زائد تک کردی گئی ہے۔ 11,000 سے زیادہ رسائی پوائنٹس فراہم کرنے کے علاوہ مکہ اور مدینہ میں وائی فائی ٹیکنالوجی کی سہولت بھی فراہم کی گئی ہے۔

اتھارٹی نے کمیونیکیشن اور انفارمیشن ٹیکنالوجی کی خدمات کو آسان بنانے اور حجاج کرام کو اعلیٰ ترین معیار کی سروسز فراہم کرنے کے لیے اپنی تمام صلاحیتیں بروئے کار لائی ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں