حج سیزن

حج کا رکن اعظم ادا کرنے حجاج بیت اللہ منیٰ سے عرفات روانہ ہونا شروع

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

مکہ المکرمہ سے ’’العربیہ‘‘ کے نامہ نگار نے بتایا ہے کہ بیت اللہ الحرام کے حج کی سعادت حاصل کرنے کے لئے آنے والے اللہ کے مہمانوں کے قافلے منیٰ کے مقدس مقام پر دن بھر قیام کے بعد اب حج کا رکن اعظم وقوف عرفات ادا کرنے کے لئے میدان عرفات کی جانب روانہ ہو رہے ہیں۔

کل بروز جمعہ ہے اور جمعہ کے دن حج کے رکن اعظم یعنی وقوف عرفات میں قیام حج اکبر کہلاتا ہے۔ حاجی میدان عرفات میں عبادات، توبہ استغفار اور تلبیہ بلند کرنے کے علاوہ ظہر اور عصر کی نمازیں قصر ادا کریں گے۔ دونوں باجماعت نمازوں کے لیے ایک ہی اذان دی جائے گی جبکہ نماز باجماعت کے لیے دونوں نمازوں کی اقامت الگ الگ ادا ہو گی۔

حجاج کرام میدان عرفات میں نو ذی الحجہ کی نماز مغرب تک قیام کے بعد واپس مزدلفہ جائیں گے جہاں وہ نماز مغرب اور عشاء جمع کر کے ادا کریں گے اور رات بھر مزدلفہ میں کھلے آسمان تلے قیام کے دوران عبادت اور دعائیں کریں گے۔

اس کے بعد حجاج کرام اگلے روز شیطانوں کو کنکریاں مارنے کا عمل یعنی رمی جمرات کریں گے، جس کے بعد وہ احرام کھول دیں گے۔

وبائی مرض کی تشخیص

جمعرات کے روز سعودی وزارت صحت نے اس امر کی تصدیق کی ہے کہ حج سیزن کے دوران وزارت اپنے جدید ترین سہولیات کو بروئے کار لا کر کسی بھی وبائی مرض پھوٹنے کی اطلاع قبل از وقت حاصل کرنے کی صلاحیت رکھتے ہیں۔

وزارت کے مطابق اس سال حج کا فریضہ دینے والے تمام حاجی کسی بھی وبائی مرض سے محفوظ ہیں۔

حج کی مرکزی کمیٹی کے سربراہ شہزادہ خالد الفیصل اور مکہ المکرمہ کے گورنر نے بتایا کہ 1443ھ کے حج کے دوران اب تک کسی حاجی میں کسی وبائی مرض کی تشخیص نہیں ہوئی۔

مکمل پلاننگ

یاد رہے کہ منیٰ کے مقام مقدس آمد، قیام اور یہاں سے میدان عرفات روانگی کے موقع پر تمام انتظامی تیاریاں پلان کے مطابق رہیں۔ ٹریفک کی صورت حال بھی سبک رفتاری سے جاری رہی۔ حکومت نے ہر مرحلے کے پہلے سے طے کردہ پلان کو کماحقہ مکمل کیا۔

سارے مراحل پلاننگ کے تحت مکمل ہوتے ہی منی کا مقام پر حاجیوں کی رہائش گاہیں، راستے اور شاہراہوں پر تلبیہ کی فلک شگاف صدا نے سماں باندھ دیا۔ تاحد نظر سفید چادروں میں لپٹے انسان دکھائی دیتے رہے، جو دن بھر قیام کے بعد علی الصباح میدان عرفات کی سمت روانہ ہوئے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں