ٹوٹے بازو کے ساتھ گمشدہ حاجیوں کی رہنمائی میں مصروف رضاکار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی عرب میں مختلف شعبوں سے تعلق رکھنے والے رضا کار حجاج کرام کی خدمت جاری رکھے ہوئے ہیں۔ جسمانی تکالیف بھی انہیں حجاج کرام کی خدمت سے دور نہیں رکھ سکتیں۔

ذرائع ابلاغ میں شائع ہونے والی متعدد تصاویر میں ایک ایسے اسکاؤٹ کو حجاج کرام کی رہ نمائی کرتے دیکھا جا سکتا ہے جس کا ایک بازو ٹوٹا ہوا ہے۔ اس اسکاؤٹ کا ایک بازو ٹوٹا ہوا ہے۔ اس کا ٹوٹا بازو گلے میں باندھا دیکھا جا سکتا ہے۔

ٹوٹے بازو کے ساتھ حجاج کی رہ نمائی کرنے والے یہ سعودی عرب کی حائل یونیورسٹی کے نواف بن عاف الشمری ہیں۔ ان کے بازو میں یہ چوٹ اس وقت لگی جب وہ منیٰ میں حجاج کرام کے لیے رضا کارانہ خدمات انجام دے رہے تھے۔

تفصیلات میں موبائل فون آپریٹر نواف نے اپنی چوٹ کے بارے میں کہا کہ منیٰ میں سروے کے دوران میں کام کرتے ہوئے اپنا توازن کھو بیٹھا، جس کی وجہ سے میرا ہاتھ فریکچر ہوگیا۔

رضاکار
رضاکار

انہوں نے کہا کہ میں کام اور پیغام پر یقین رکھتا ہوں۔ ضیوف الرحمان کی رہ نمائی اور خدمت میرا جذبہ اور شوق ہے اور میں اس کے لیے ہر مشکل کا سامنا کرنے کے لیے تیار ہوں۔ ان کا کہنا تھا کہ حجاج کی خدمت ایک عظٰم کام ہے اور کوئی مشکل اس میں رکاوٹ نہیں بن سکتی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں