حج سیزن

حجاج کی سہولت کی خاطرمکہ معظمہ میونسلپٹی کی جانب سے مصنوعی ذہانت کا استعمال

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

حج سیزن کے دوران مقدس دارالحکومت [مکہ معظمہ] میونسپلٹی جدید ٹیکنالوجی کا استعمال کرتے ہوئے اپنی خدمات کو بہتربنانے اور انہیں ترقی دینے کی ہمہ جہت مساعی جاری رکھےہوئےہے۔ ان مساعای میں مصنوعی ذہانت کو فعال کرنا بھی شامل ہے تاکہ حجاج کے تجربے کو بہتر بنایا جا سکے اور انہیں تمام خدمات فراہم کی جا سکیں۔

مکہ معظمہ میونسپلٹی نے اس سال 1444ھ کے حج سیزن کے دوران سمارٹ سروسز ایک پیکج جاری کیا ہے جس کا مقصد حاجیوں کے تجربے کو بہتر بنانا اور ان کی عبادت میں جدید سہولیات کے ذریعے مدد کرنا ہے۔

مقدس دارالحکومت مکہ میونسپلٹی نے وضاحت کی کہ اس نے مقدس مقامات پر سروس سینٹرز کو چلانے کے لیے جدید ایپلی کیشنز کا ایک پیکج فراہم کیا ہے۔ ان مراکز کی تعداد 28 ہے۔ ان مراکز میں دوبارہ انجینیرنگ کے طریقہ کار اور آپریشنز کے ذریعے ادارہ جاتی کارکردگی کو بہتر بنانے اور اسے فعال کرنے کے لیے جدید ٹیکنالوجی کا استعمال کیا جا رہا ہے۔

عوام کی خدمت کے لیے وقف متعدد ایپس کو بھی فعال کر دیا گیا ہے، جن میں باورچی خانے کے اہل مالکان کے لیے عارضی اجازت نامے جاری کرنے کی سروس، سسٹم کے ذریعے درخواستیں جمع کرانا اور خود کار طریقے سے انہیں چھان بین کے لیے مجاز میونسپلٹی کو منتقل کرنا شامل ہے۔

بلدیہ نے مقدس مقامات میں ضیوف الرحمان کو محفوظ اور صحت مند ماحول فراہم کرنے کے لیے میونسپلٹی کی کوششوں کے حصے کے طور پر صفائی کے آلات کا انتظام کرنے کے لیےجدید الیکٹرانک سسٹم پر متعارف کرایا ہے۔ اس کے ذریعے وہ تمام لوگوں کی نقل و حرکت پر نظر رکھتا ہے۔ سامان اور مشینری، کنٹینرز اتارنے میں مدد کرتا ہے۔

ان سمارٹ سلوشنز کا مقصد عازمین کے تجربے کو بہتر بنانا اور حج کے موسم کے دوران ان کے طریقہ کار کو آسان بنانا اور جدید ٹیکنالوجی کا استعمال کرتے ہوئے سرکاری خدمات کو ترقی دینے میں مملکت کے 2030 کے وژن کے اہداف کا حصول ممکن بنانا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں